پاناما جے آئی ٹی سے بڑی سانحہ بلدیہ کی جے آئی ٹی ہے، آفاق احمد JIT
The news is by your side.

Advertisement

پاناما جے آئی ٹی سے زیادہ اہم سانحہ بلدیہ کی رپورٹ ہے، آفاق احمد

کراچی: مہاجر قومی موومنٹ کے سربراہ آفاق احمد نے کہا ہے کہ پاناما جے آئی ٹی سے زیادہ اہم بلدیہ فیکٹری کی جے آئی ٹی ہے، سانحہ بلدیہ کے ذمہ داروں کو اب تک سامنے نہیں لایا گیا۔

لانڈھی بیت الحمزہ پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے آفاق احمد نے کہا کہ 2002 میں مشرف کو جب ووٹوں کی ضرورت تھی تو اُن سے مہاجروں کے حقوق، یونیورسٹی اور محصورین بنگلہ دیش کی واپسی کا مطالبہ کیا جاسکتا تھا مگر مشرف کے اتحادیوں نے مہاجر قوم کے لیے کچھ نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ مشرف نے بانی ایم کیو ایم کے مطالبے پر بیت الحمزہ کو مسمار کیا اور کارکنان کو گرفتار کرکے جھوٹے مقدمات بنائے گئے، سابق صدر سے جب عمرے پر ملاقات ہوئی تو انہوں نے اپنی غلطی کا اعتراف کیا۔

آفاق احمد نے کہا کہ کراچی میں قائم ہونے والے امن میں رینجرز اور پولیس نے بڑا کردار ادا کیا، کراچی آپریشن کو شفاف رکھنا چاہیے اور تمام مجرمان کے خلاف بلاامتیاز کارروائی کی جانی چاہیے۔

مہاجر قومی موومنٹ کے سربراہ نے کہا کہ پاناما لیکس کی جے آئی ٹی کی اپنی اہمیت ہے مگر سانحہ بلدیہ کی جے آئی ٹی بہت اہم ہے، فیکٹری کو جلے ہوئے کتنے سال ہوگئے مگر ابھی تک سانحہ بلدیہ کے ذمہ داروں کو گرفتار نہیں کیا گیا۔

آفاق احمد کا مزید کہنا تھا کہ ماضی میں مہاجروں کو حقوق سے محروم رکھا گیا جبکہ دس سال کی حکومت کے دوران کراچی کے شہریوں کے لیے یونیورسٹیاں اور روزگار کے نئے مواقع پیدا کیے جاسکتے تھے، ماضی میں اگر مشرف سے صحیح مطالبات کیے جاتے تو آج اس قوم کی صورتحال کافی تبدیل ہوتی ، ہم مہاجروں میں تقسیم نہیں چاہتے اس لیے ہر فیصلہ قوم کے مفاد میں رکھتے ہوئے کرتے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں