The news is by your side.

Advertisement

’’مرد ایک ماں کے جذبات کو محسوس نہیں کرسکتے مگر خواتین نے بھی ساتھ نہیں دیا‘‘

کوئٹہ: بلوچستان اسمبلی کی خاتون رکن ماہ جبیں نے کہا ہے کہ مرد ایک ماں کے جذبات کو محسوس نہیں کرسکتے، خواتین اراکین بھی میرے ساتھ کھڑی نہیں ہوئیں۔

تفصیلات کے مطابق اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے پر خاموشی توڑتے ہوئے رکن اسمبلی کا کہنا تھا کہ میرےبچےکواسمبلی میں لےجانےپراعتراض کیاگیا جس پر میں نے اراکین سے پوچھا کہ بچے کو ایوان میں لانے پر تحریری پابندی ہے تو دکھا دیں مگر کوئی جواب نہیں دیا گیا۔

اُن کا کہنا تھا کہ پابندی سے متعلق میرے سوال پر جواب دکھانے کے بجائے تنقید اور شور کیا گیا جس پر میں میں مجبوراً بچے کو گود میں اٹھائے واپس باہر آگئی۔

’’مردتوایک ماں کےجذبات کومحسوس ہی نہیں کرسکتے مگر افسوس یہ کہ خواتین سمیت میرےساتھ کوئی بھی کھڑانہیں ہوا، ماں کےرتبےکےحساب سے اس کی عزت ہونی چاہیے‘‘۔

اُن کا مزید کہنا تھا کہ میری کوشش ہوگی بچوں کوایوان میں لانے پرپابندی نہ ہو تاکہ وہ اراکین اسمبلی جن کے چھوڑے بچے ہیں وہ اپنے ساتھ بے فکر ہوکر اپنے بچوں کو اسمبلی لاسکیں۔

یاد رہے کہ دو روز قبل بلوچستان اسمبلی کے اجلاس میں خاتون رکن اسمبلی بیٹے کو گود میں لے کر ایوان پہنچی تھی جس پر اراکین نے انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا تو وہ روتی ہوئی باہر چلی گئی تھیں۔

مزید پڑھیں: بیٹا ساتھ لانے پر خاتون رکن بلوچستان اسمبلی کو تنقید کا سامنا، روتی ہوئی باہر چلی گئیں

بلوچستان اسمبلی کے اراکین نے اراکین نے بچے کو ساتھ لانے پر اعتراض کرتے ہوئے ان کو اپنی ساتھی کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا تھا، ان کی جلی کٹی باتیں سن کر ماہ جبیں کی آنکھیں بھرآئیں یہاں تک کہ ان کو اسمبلی سے باہر جانے کا کہہ دیا گیا اور وہ مایوسی کے عالم میں اپنے بیٹے کو لے کر ایوان سے باہر چلی گئیں تھیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں