جج کی رخصت کے باعث منی لانڈرنگ کیس میں پیش رفت نہ ہو سکی -
The news is by your side.

Advertisement

جج کی رخصت کے باعث منی لانڈرنگ کیس میں پیش رفت نہ ہو سکی

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور منی لانڈنگ کیس میں الگ الگ پیشی پر عدالت آئے تاہم بینکنگ کورٹ کراچی کے جج کی عدم دستیابی پر سماعت بغیر کارروائی ملتوی کر دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق جج کی رخصت کے باعث منی لانڈرنگ کیس میں پیش رفت نہیں ہو سکی، آصف علی زرداری اور فریال تالپور سمیت دیگر ملزمان کراچی کی بینکنگ کورٹ میں حاضری لگوا کر چلے گئے۔

حسین لوائی اور عبد الغنی مجید کو بھی عدالت لایا گیا تھا

آصف زرداری اور ان کی بہن عدالت پہنچے تو معلوم ہوا کہ جج چھٹی پر ہیں، جس پر پیپلز پارٹی کے دونوں رہنما حاضری لگوا کر واپس چلے گئے۔

حسین لوائی اور عبد الغنی مجید کو بھی عدالت لایا گیا تھا، حسین لوائی نے کمرۂ عدالت میں آصف زرداری سے ملاقات بھی کی۔ انور مجید نے بھی عدالت میں پیشی بھگتائی۔

ایف آئی اے نے جواب جمع کرانے کے لیے مہلت مانگ لی، سندھ ہائی کورٹ نے انور مجید کی درخواست پر ایف آئی اے کے تفتیشی افسر نجف مرزا کو 20 نومبر کو طلب کرلیا۔


یہ بھی پڑھیں: بینکنگ کورٹ نے منی لانڈرنگ کیس کی سماعت 16 اکتوبرتک ملتوی کردی


عدالت نے سماعت ملتوی کر دی، اگلی سماعت 13 نومبرکو ہوگی۔ خیال رہے کہ سندھ ہائی کورٹ میں سماعت منی لانڈرنگ کیس میں گرفتار انور مجید کی درخواست پر ہوئی تھی۔

واضح رہے کہ اکیس دن قبل کیس کی سماعت پر آصف زرداری، فریال تالپور، انور مجید اور ان کے تینوں بیٹے عدالت کے سامنے پیش ہوئے تھے، سماعت کے آغاز پر ایف آئی اے پراسیکیوٹر نے درخواست پر کارروائی کی مخالفت کی تھی، بعد ازاں سماعت آج کے دن تک ملتوی کر دی گئی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں