site
stats
کھیل

پاکستان کرکٹ بورڈ نے ٹیسٹ کرکٹر باسط علی کو دونوں عہدوں سےفارغ کردیا

لاہور : پاکستان کرکٹ بورڈ نے ٹیسٹ کرکٹر باسط علی کو دونوں عہدوں سے فارغ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق باسط علی پی سی بی کی آنکھ میں کھٹکنے لگے، انٹرنیشنل کرکٹر محمود حامد سے تلخ کلامی اور تھپڑ رسید کرنے کے واقع نے باسط کو پی سی بی سے دور کرنا شروع کردیا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیرمین شہریار خان نے دونوں کرکٹرز سے ملاقات کی تھی اور کہا تھا کہ اس معاملے کی تحقیقات کی جائے گی۔

چئیرمین پی سی بی شہریار خان کا کہنا ہے کہ معاملہ سنجیدہ نوعیت کا ہے، باسط علی کو جونیئر سلیکشن کمیٹی کی چیئرمین شپ اور خواتین کے ہیڈ کوچ کے عہدوں سے ہٹا دیا گیا ہے، ان پر کوئی پابندی نہیں وہ پی ایس ایل سمیت کسی بھی ٹیم کے ساتھ ذمہ داریاں نبھا سکتے ہیں۔

یاد رہے کہ باسط علی نے ایک روز قبل سابق کرکٹر محمود حامد کو تھپڑ ماراتھا جس کے بعد انہوں نے محمود حامد کو اپنا بھائی قرار دیتے ہوئے معافی بھی مانگ لی تھی۔


مزید پڑھیں : باسط علی پی سی بی کے دونوں عہدوں سے مستعفی


باسط علی نے معافی تو مانگ لی تھی لیکن پھر بھی وہ الجھن کا شکار دکھائی دئیے اور آخر میں پی سی بی کے ساتھ کام کرنے سے انکار کردیا ہے اور انکار کے ساتھ یہ بھی اعلان کیا کہ قومی ویمن کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ اور جونیئر سلیکشن کمیٹی کی چیئرمین شپ کے عہدے سے استعفیٰ دے رہا ہوں۔

ان کا کہنا ہے کہ وہ قومی ٹیم کیخلاف بے جا تنقید برداشت نہیں کرسکتے، عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ سوچ سمجھ کر کیا ہے۔

خیال رہے کہ سابق کرکٹر محمود حامد نے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں قومی ویمن ٹیم کی کارکردگی کو آڑے ہاتھوں لیا تھا۔ جس پر باسط علی نے برہمی کا اظہار کیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top