The news is by your side.

فٹبال ورلڈ کپ، ٹرافی کی تاریخ، ساخت اور قیمت جان کر حیران رہ جائیں

قطر میں فیفا ورلڈ کپ کا آغاز ہو گیا ہے ہم آپ کو بتا رہے ہیں اس ورلڈ کپ کے بارے میں کچھ تاریخی اور حیران کن حقائق، مالیت اور ساخت کے بارے میں۔

دنیائے کھیل میں فٹبال کو جو مقبولیت حاصل ہے وہ کسی اور کھیل کو نہیں ملی یہی وجہ ہے کہ ہر چار سال بعد ہونے والے اس کے عالمی کپ پر دنیا بھر کی نظریں لگی ہوتی ہیں۔ قطر میں 22 ویں فیفا ورلڈ کپ کا آغاز ہوچکا ہے۔ 32 ٹیمیں ٹرافی کے حصول کے لیے سر توڑ کوششیں کریں گی لیکن فتح کا تاج صرف ایک ٹیم کے سر سجے گا۔

جس ٹرافی کے حصول کیلیے قطر میں دنیا کے 32 ممالک ایک دوسرے کے صف آرا ہوں گے آج ہم آپ کو اس ٹرافی کی تاریخ، ساخت اور مالیت کے ان گوشوں سے پردے ہٹائے گے جن سے بہت کم لوگ واقف ہوں گے اور نئے جاننے والے جان کر حیران رہ جائیں گے۔

فٹبال ورلڈ کپ کی تاریخ

فٹبال ورلڈ کپ کی تاریخ 88 سال پرانی ہے۔ دنیا میں فٹبال کا پہلا عالمی کپ 1930 میں منعقد ہوا اور 2018 تک 21 بار یہ عالمی میلہ سج چکا ہے اس دوران دوسری عالمی جنگ کے باعث 1938 کے بعد 12 سال تک یہ عالمی مقابلہ منعقد نہیں ہوا۔

اب تک فٹبال کے ہونے والے 21 عالمی مقابلوں میں مجموعی طور پر 8 ٹیموں نے ٹرافی کو اپنے نام کیا۔ ان میں برازیل سب سے آگے ہے جس نے اب تک پانچ بار عالمی چیمپئن ہونے کا اعزاز حاصل کیا ہے۔ جرمنی اور اٹلی چار چار بار ٹرافی اٹھا چکی ہیں۔ ارجنٹینا، فرانس اور یورو گوئے نے دو دو بار فٹبال کی بادشاہت کا تاج اپنے سر پر سجایا جب کہ انگلینڈ اور اسپین ایک ایک بار عالمی چیمپئن چکے ہیں۔ فرانس دفاعی چیمپئن کی حیثیت سے اس ٹورنامنٹ میں شریک ہے۔

ٹرافی کی دلچسپ تاریخ

آج جو ورلڈ کپ کی ٹرافی دنیا دیکھ رہی ہے یہ شروع سے ایسی نہیں تھی بلکہ 1930 سے 1938 تک ورلڈ کپ جیتنے والی ٹیموں کو جو ٹرافی دی گئی اسے فرانس کے ایک ڈیزائنر Abel Lafleur نے ڈیزائن کیا تھا اور یہ ٹرافی چاندی سے تیار کی گئی تھی لیکن اس پر سونے کی تہہ چڑھائی گئی تھی۔

پہلے پہل ورلڈ کپ کی اس ٹرافی کو ایک یونانی دیوی کے نام پر وکٹری کا نام دیا گیا بعد ازاں اس کا نام فیفا کے تیسرے صدر Jules Rimet کے نام پر رکھ دیا گیا تھا جنہوں نے فٹبال کے عالمی کپ کا خیال پیش کیا تھا۔

 

 

دوسری عالمی جنگ کے دوران 12 سال تک ورلڈ کپ نہ ہونے پر 1950، 1954، 1958 اور 1962 میں Jules Rimet ٹرافی ٹیموں نے جیتی لیکن فٹبال عالمی کپ کے دوبارہ باقاعدہ آغاز سے قبل اس ٹرافی کو عوامی نمائش کے دوران چوری کرلیا گیا جو بعد ازاں مل گئی تھی تاہم آئندہ ایسے کسی بھی واقعے کی صورت میں پریشانی سے بچنے کیلیے اس کی نقل تیار کرائی گئی۔

اس اصل ٹرافی کو 1970 میں ایک بار پھر چوری کرلیا گیا جو تلاش بسیار کے باوجود دوبارہ نہ مل سکی جس کے بعد اس سال ورلڈ کپ کی فاتح ٹیم برازیل کو اس کی نقل دی گئی جو اب اسی کے پاس ہے۔
موجودہ ٹرافی کب تیار ہوئی اور کب تک استعمال ہوگی؟

دنیا فیفا ورلڈ کپ کی اب جو ٹرافی دیکھتی ہے جس میں دو انسان دنیا کو اٹھائے ہوئے نظر آتے ہیں ی ٹرافی 1974 کے عالمی کپ کے لیے ڈیزائن کی گئی تھی جو اب تک جوں کی توں چلی آ رہی ہے۔ اسے اٹلی کے ڈیزائنر Silvio Gazzaniga نے ڈیزائن کیا تھا اور اس ڈیزائن کی ٹرافی کا استعمال آئندہ چار ورلڈ کپ یعنی 2038 تک جاری رہے گا جس کے بعد اس ڈیزائن کو ترک کرکے 2042 کے ورلڈ کپ کے لیے نئے ڈیزائن کی ٹرافی تیار کی جائے گی۔

 

 

ٹرافی کس چیز سے بنی ہے اور مالیت کیا ہے؟

یہ ٹرافی 18 قیراط سونے سے تیار کی گئی ہے جس کا وزن 6 کلوگرام ہے اور 75 فیصد حصہ سونے پر مشتمل ہے۔ لیکن اس ٹرافی کی مالیت کتنی ہے یہ آپ کو ضرور حیران کرے گی کیونکہ جب اس ٹرافی کو 1974 میں تیار کیا گیا تھا تو اس وقت اس کی مالیت 50 ہزار ڈالر کے لگ بھگ تھی لیکن موجودہ دور میں یہ مالیت دو کروڑ ڈالرز (4 ارب 44 کروڑ پاکستانی روپے سے زائد) مالیت کی ہے۔

ٹرافی سے متعلق سب سے خاص بات

پہلے تو ٹورنامنٹ جیتنے والی ٹیم اصلی ٹرافی کو اپنے ساتھ لے جاتی تھیں مگر اب فیفا کی جانب سے فاتح ٹیم کو کانسی سے بنی گولڈ پلیٹڈ نقل دی جاتی ہے۔

اصلی ٹرافی فیفا کے ورلڈ فٹبال میوزیم میں رہتی ہے اور خصوصی مواقع پر ہی اسے باہر نکالا جاتا ہے۔ یہاں یہ بھی بتاتے چلیں کہ ہر کوئی اس کو ہاتھ نہیں لگا سکتا۔ اس ٹرافی کو چھونے کی اجازت بھی بہت کم افراد کو حاصل ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں