The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب: خواتین کے لیے علیحدہ ساحل بنانے کا منصوبہ

ریاض: سعودی عرب میں خواتین کے لیے علیحدہ ساحل بنانے پر کام شروع کردیا گیا، ساحل پر سبزہ زاروں کے علاوہ ریستوران، قہوہ خانے، سپر مارکیٹ اور مختلف قسم کی سہولتیں مہیا کی جائیں گی۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق الجبیل انڈسٹریل سٹی کی بلدیاتی کونسل نے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ جبیل میں خواتین کے لیے پہلا علیحدہ ساحل کورنیش سی فرنٹ کے شمال میں بنایا جائے گا۔

بلدیاتی کونسل کے چیئرمین نائف الدویش کا کہنا ہے کہ خواتین کے لیے پہلے علیحدہ ساحل کا ڈیزائن تیار ہو چکا ہے، اس پر 90 روز کے اندر کام شروع کر دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ یہ ہمارے سیاحتی منصوبوں میں سے ایک ہوگا۔ بلدیاتی کونسل نے اس حوالے سے 5 سالہ منصوبہ تیار کرلیا ہے۔

نائف الدویش کا کہنا تھا کہ خواتین کے لیے پہلا علیحدہ ساحل سعودی وژن 2030 کا حصہ ہے، اس کا مقصد بلدیاتی کونسل کی سرمایہ کاری کو نئی جہت دینا اور زندگی کا معیار بلند کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ خواتین کے علیحدہ ساحل کے لیے مناسب رقبہ مختص کیا گیا ہے جہاں سبزہ زاروں کے علاوہ ریستوران، قہوہ خانے، سپر مارکیٹ اور مختلف قسم کی سہولتیں مہیا کی جائیں گی۔

چیئرمین کا مزید کہنا تھا کہ یہاں پرائیوسی کا خصوصی طور پر خیال رکھا جائے گا، یہ الجبیل شہر کی آبادی سے قریب ہوگا اور اس کا فائدہ یہ ہوگا کہ الجبیل انڈسٹریل سٹی کے باشندے آسانی سے ساحل پہنچ سکیں گے اور وہاں سیر کر سکیں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں