The news is by your side.

Advertisement

بیروت دھماکا، وزیر نے استعفیٰ دے دیا

بیروت: لبنان میں ہونے والے ہولناک دھماکے کے بعد اپنی ناکامیوں کا اعتراف کرتے ہوئے ملکی وزیراطلاعات منال عبدالصمد نے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق لبنان دھماکے کے بعد شدید تنقید اور احتجاج کے تناظر میں وزیراطلاعات منال نے عہدہ چھوڑ دیا، مظاہرین کا کہنا ہے کہ دھماکا حکومتی نااہلی ہے۔

رپورٹ کے مطابق لبنان کی خاتون وزیراطلاعات نے آج صبح استعفیٰ دیا لیکن اس سے قبل اپنے بیان میں انہوں نے غلطیوں اور ناکامیوں کا اعتراف کرتے ہوئے عوام سے معافی بھی مانگی، ان کا کہنا تھا کہ ہم آپ کی توقعات پر پورا نہ اتر سکے۔

شاہ سلمان کی ہدایت پر بیروت کے متاثرین کے لیے مزید امدادی سامان روانہ

دھماکے کے بعد سے مظاہروں کا سلسلہ تاحال برقرار ہے، مظاہرین نے الزام عائد کیا ہے کہ لبنان کی کرپٹ حکومت دھماکے میں ملوث ہے۔ خیال رہے کہ گزشتہ دنوں بیروت میں ہونے والے ہولناک دھماکے کے نتیجے میں 150 افراد ہلاک جبکہ 6 ہزار سے زائد زخمی ہوئے تھے۔

مقامی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق دھماکے کے باعث 3 لاکھ افراد بے گھر ہوئے ہیں۔

بیروت دھماکے کے اثرات کراچی تک پہنچ گئے، حفاظتی اقدامات شروع

واضح رہے کہ مظاہرین نے مطالبہ کیا ہے کہ ملک میں دوبارہ انتخابات ہونے چاہئیں، واقعے میں ملوث حکمران طبقے کو فوری گرفتار کرکے ان کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں