site
stats
پاکستان

بینظیر قتل کیس میں سزایافتہ خرم شہزاد دوبارہ ایس ایس پی اسپیشل برانچ راولپنڈی تعینات

لاہور: آئی جی پنجاب کا انوکھا کارنامہ سزا یافتہ اہلکار کو ضمانت ہوتے ہی پرانے عہدے پر بحال کردیا۔

تفصیلات کے مطابق آئی جی پنجاب نے بینظیر بھٹو قتل کیس میں سزایافتہ خرم شہزاد کو دوبارہ ایس ایس پی اسپیشل برانچ راولپنڈی تعینات کردیا۔

خرم شہزاد لاہورہائیکورٹ سے ضمانت پررہا ہوئے تھے۔

خرم شہزاد سزا سے قبل بھی ایس ایس پی اسپیشل برانچ راولپنڈی تعینات تھے، ایس پی منتظر مہدی کو ایس ایس پی آپریشنزلاہور تعینات کردیا گیا، آئی جی پنجاب نے دونوں افسران کی تعیناتی کا نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے۔

یاد رہے کہ بینظیربھٹو قتل کیس میں سابق پولیس افسران سعودعزیزاورخرم شہزادکی ضمانتیں منظورکرلی گئیں تھیں اور دونوں کودو،دولاکھ کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کاحکم دیا تھا۔

جس کے بعد سابق صدر آصف علی زرداری کی صاحبزادی آصفہ بھٹو زرداری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بینظیر بھٹو قتل کیس میں سابق پولیس افسران سعودعزیزاورخرم شہزادکی ضمانتیں منظور ہونے پر درعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ فیصلے سے ثابت ہوگیا کہ بھٹو خاندان کیلئے کوئی انصاف نہیں ہے۔


مزید پڑھیں: بے نظیر بھٹو قتل کیس میں پرویز مشرف اشتہاری قرار


خیال رہے کہ راولپنڈی کی انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 9 برس بعد بے نظیر قتل کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے سابق پولیس افسران سعودعزیزاورخرم شہزاد کو سترہ،سترہ سال قید اوردس لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی تھی جبکہ سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشروف کو مفرور قرار دیتے ہوئے اُن کی جائیداد ضبط کرنے کا حکم بھی جاری کیا تھا۔

یصلے کو پاکستان پیپلز پارٹی نے مسترد کردیا تھا۔ بے نظیر بھٹو کی صاحبزادیوں آصفہ اور بختاور نے اپنے اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ قتل کیس میں صرف سہولت کاروں کو سزا ہوئی، حقیقی قاتل آج بھی آزاد ہیں۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top