کلثوم نوازکی اہلیت جانچنے والا بنچ دوسری بار تحلیل -
The news is by your side.

Advertisement

کلثوم نوازکی اہلیت جانچنے والا بنچ دوسری بار تحلیل

لاہور : این اے ایک سو بیس کے ضمنی انتخابات میں ن لیگ کی امیدوار بیگم کلثوم نواز کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کے خلاف دائر درخواستوں کی سماعت کرنے والا تین رکنی بنچ دوسری بار تحلیل ہوگیا، جسٹس شمس محمود مرزا نے بھی درخواست کی سماعت سے معذرت کرلی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس امین الدین خان کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے کیس کی سماعت کی، عدالتی کاروائی شروع ہوتے ہی بنچ کے فاضل رکن جسٹس شمس محمود مرزا نے ذاتی وجوہات کی بناء پر کیس کی سماعت سے معذرت کرلی، جس پر بنچ نے کیس چیف جسٹس کو واپس بھجوا دیا تاکہ سماعت کے لیے نیا بنچ تشکیل دیا جائے۔

لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس سید منصورعلی شاہ کی جانب سے تشکیل دیا گیا تھا ، پہلا بنچ بھی جسٹس فرخ عرفان خان کی جانب سے کیس کی سماعت سے معذرت کی بناء پر تحلیل ہوگیا تھا۔


مزید پڑھیں : کلثوم نواز کے کاغذات نامزدگی کی منظوری کے خلاف سماعت، فل بینچ تشکیل


پیپلز پارٹی کے امیدوار فیصل میر اور عوامی تحریک کے رہنما اشتیاق چوہدری کی جانب سے بیگم کلثوم نواز کے کاغذات نامزدگی کو چیلنج کیا گیا ہے، درخواستوں میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ بیگم کلثوم نواز نے کاغذات نامزدگی میں اپنی آمدن اور اثاثے ظاہر نہیں کئے۔ انھوں نے خود کو نوازشریف کی زیر کفالت ظاہر کیا مگر وہ کئی کمپنیوں میں شئیر ہولڈر ہیں۔

درخواستوں میں کہا گیا ہے کہ بیگم کلثوم نواز نے زرعی انکم ٹیکس کی ادائیگی نہیں کی۔ اقامہ ظاہر کیا مگر تنخواہ کی رسید اور اس سے ہونے والی بچت کو ظاہر نہیں کیا، انھوں نے مری کی رہائش گاہ میں موجود فرنیچر اور دیگر گھریلو اشیاء کا کوئی ذکر نہیں کیا۔

درخواست گزاروں نے مزید کہا کہ سندھ میں ان کے خلاف بغاوت کا مقدمہ درج ہے مگر یہ تمام حقائق چھپائے گئے لہذا وہ الیکشن لڑنے کی اہل نہیں ، اس لیے ہائی کورٹ ریٹرننگ افسر کے فیصلے کو کالعدم قرار دے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں