site
stats
پاکستان

براہمداغ بگٹی نے بھارت میں سیاسی پناہ حاصل کرنےکا فیصلہ کرلیا

اسلام آباد : کالعدم بلوچ ری پبلکن پارٹی کے خودساختہ جلاوطن رہنما براہمداغ بگٹی نے بھارت میں سیاسی پناہ لینے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق ممتاز بلوچ رہنما نواب اکبرخان بگٹی کے پوتے اور بلوچ علیحدگی پسند رہنما براہمداغ بگٹی نے بھارت میں سیاسی پناہ لینے کے لیے باضابطہ د رخواست جمع کرانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے مودی کی حکومت نے بھی تیاری مکمل کر لی ہے اوراصولی طور پر براہمداغ بگٹی اوران کے قریبی ساتھیوں کو بھارتی شہریت دینے کافیصلہ کر لیا ہے تاکہ وہ دنیا بھر میں آزادانہ طورپرسفرکرسکیں۔

واضح رہے بھارت اس قبل چین کے خلاف تحریک چلانے والے” دلائی لامہ” کو بھارتی پاسپورٹ جاری کرچکا ہے جسے استعمال کرتے ہوئے وہ دنیا بھر میں سفر کرتے تھے اورچین کے خلاف تحریک چلاتے تھے۔

ذرائع کا یہ بھی دعویٰ ہے کہ براہمداغ بگٹی نے جنیوا میں اپنی پارٹی کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس بلایا ہے جس میں مشاورت کے بعد وہ 18 یا 19 ستمبر کو بھارت میں سیاسی پناہ کے حصول کے لیے جنیوا میں درخواست دیں گے۔

واضح رہے کہ براہمداغ بگٹی 2006ء میں اپنے دادا نواب اکبر بگٹی کی ہلاکت کے بعد پاکستان سے افغانستان منتقل ہو گئے تھے اور کچھ عرصے بہ طور ریاستی مہمان قیام کرنے کے بعد 2010ء میں سوئٹزرلینڈ چلے گئے اورتب سے اپنی فیملی کے ساتھ وہیں پر سیاسی پناہ لیے ہوئے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top