site
stats
پاکستان

بھکی پاور پلانٹ تاحال فعال نہیں ہوسکا

لاہور: اربوں روپے کی لاگت سے تیار ہونے والا بکھی پاور پلان وزیراعظم کے نوٹس کے باوجود تاحال فعال نہیں ہوسکا‘ پاور پلانٹ کا افتتاح گزشتہ ماہ کیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق 770 میگا واٹ بجلی پیدا کرنے کی صلاحیت کے حامل بھکھی پاورپلانٹ میں یکم جون کوفنی خرابی پیداہو گئی تھی‘ وزارتِ پانی و بجلی کے حکام مسلسل خرابی کو دور کرنے کے لیے کوشاں ہیں تاہم آئندہ ہفتے بھی اس کی فعالی کے آثار نظر نہیں آرہے۔

یاد رہے کہ وزیراعظم نے19اپریل کو شیخو پورہ میں 77 ارب روپے کی لاگت سے بننے والے اس پاور پلانٹ کا افتتاح کیا تھ اور محض بارہویں دن ہی اس پلانٹ میں فنی خرابی پیدا ہوگئی۔

تکینکی خرابی کے باعث 350 میگا واٹ بجلی بننا بند ہوگئی۔ بھکی پاور پلانٹ سے نیشنل گریڈ میں 770 میگا واٹ بجلی شامل کی جاتی تھی۔ اٹھارہ ماہ کے ریکارڈ ٹائم میں بننے والے اس پلانٹ نے ریکارڈ مدت میں خراب ہونے کا ریکارڈ بھی قائم کردیا ہے۔

افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے وزیر اعظم نے خود بتایا تھا کہ بھکی پاور پلانٹ پر 77 ارب روپے خرچ ہوئے اور منصوبے میں 53 ارب روپے کی بچت ہوئی۔

یاد رہے کہ پاور پلانٹ کے افتتاح کے موقع پر وزیراعظم نے دعویٰ کیا تھا کہ جون2018تک 8946میگاواٹ بجلی سسٹم میں شامل ہوگی،بجلی کے جتنے منصوبے ستّر سال میں لگے اتنے ہم نے تین سال میں لگائے۔

انہوں نے بھی لوڈشیڈنگ کا اعتراف کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں لوڈشیڈنگ کی وجہ دریاؤں اورڈیموں میں پانی کی قلت ہے، لیکن بجلی کی کمی کے ذمہ داروں کے خلاف سخت ایکشن ہوگا، بجلی آنے پر اس کی طلب میں بھی اضافہ ہوگیا ہے،


اگرآپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اوراگرآپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پرشیئرکریں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top