بھولا گجرقتل کیس: ملزم نے رانا ثنا اللہ کو قتل کی منصوبہ بندی کا مورد الزام ٹہرادیا -
The news is by your side.

Advertisement

بھولا گجرقتل کیس: ملزم نے رانا ثنا اللہ کو قتل کی منصوبہ بندی کا مورد الزام ٹہرادیا

فیصل آباد: بھولا گجر قتل کیس کے ملزم نوید نے اعترافِ جرم کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثنا اللہ کو قتل کے محرک کا مورد الزام ٹہرادیا۔

تفصیلات کے مطابق آج فیصل آباد کی عدالت میں ملزم نے اعترافی بیان دیا جس میں اس نے کہا کہ بھولا گجرکوراناثنااللہ کے کہنے پرقتل کیا۔

انسداد دہشتگردی کی عدالت میں سماعت کے دوران ملزم نےاعتراف کیا کہ راناثنااللہ کےڈیرےپربھولاگجرکےقتل کی منصوبہ بندی کی، مقتول کو کلاشنکوف سے گولیاں ماریں اوراسلحہ واپس ڈیرےپردے دیا۔

ملزم نے یہ بھی کہا کہ بھولا گجرکوقتل کرنے کے بعد ’’وائبر‘‘پرراناثنااللہ کواطلاع بھی دی اورانہوں نےمیری بھرپورمددکرنےکاوعدہ کیاتھا، ملزم کا مزید کہنا تھا کہ وہ بھولاگجرکوقتل کرنےکےبعدکچھ عرصےکیلئےروپوش ہوگیاتھا۔

ملزم نوید نے اعتراف بیان میں مزید بتایا کہ بھولاگجرپارٹی چھوڑکرپی ٹی آئی میں شامل ہونےوالےتھے اوررانا ثنااللہ نےکہا تھا کہ وہ ان کے لئے مسائل پیدا کررہاہے۔

نوید کےاعترافی بیان کے بعد عدالت نےفوری تحقیقات کاحکم دیتے ہوئے کہا ہے کہ کہ ایس پی سےکم رینک کےافسرکوتفتیش نہ دی جائے۔

اس بیان کے ردعمل میں رانا ثنا اللہ نے اے آروائی نیوز کے پروگرام ’’آف دی ریکارڈ‘‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملزم نوید کئی سال سے اشتہاری مجرم ہے اور کسی اشتہاری کے بیان پر کسی کو مجرم قرارنہیں دیا جاسکتا۔

واضح رہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما عابد شیرعلی کے والد چوہدری شیرعلی بھی اس سے قبل کئی باررانا ثنا اللہ کو قاتل قراردے چکے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں