The news is by your side.

Advertisement

کیا ہوا جب تیزرفتارموٹر سائیکل گہری کھائی میں جا گری

چترال: ریشن کے مقام پر ایک تیز رفتار موٹر سائیکل حفاظتی دیوار توڑتی ہوئی سینکڑوں فٹ گہری کھائی میں جا گری ۔ مقامی آبادی نے اپنی مدد آپ کے تحت بائیک سواروں کو کھائی سے نکالا۔

تفصیلات کے مطابق یہ یہ واقعہ چترال کے علاقے بونی روڈ پر ریشن کے مقام پر پیش آیا، جس میں ایک نوجوان جاں بحق اور دوسرا زخمی ہوا۔ دو موٹر سائیکل سوار ریشن سے بونی کی طرف جارہے تھے، دومون گول کے مقام پر خطرناک موڑ سے گزرتے ہوئے موٹر سائکل بے قابو ہوکر سڑک کے کنارے نصب حفاظتی دیوار سے ٹکرا گئی۔

اے آروائی نیوز کے نمائندے کے مطابق یہ دیوار اتنی کمزور اور ناقص معیار کی تھی کہ وہ ایک موٹر سائیکل کی ٹکر کو بھی برداشت نہ کرسکا اور دونوں سینکڑوں فٹ نیچے گہرے کھائی میں گر گئے۔

سانحہ دیکھ موقع پر موجود افراد اکھٹے ہوئے اور ان میں سے کچھ بہادر جوان اس گہری کھائی میں ایک برساتی نالے کے ذریعے اتر گئے جس کے اندر جانے کا کوئی راستہ نہیں تھا۔مقامی لوگوں نے دونوں کو وہاں سے اٹھایا مگر اس نالے سے ان کو سڑک پر لانے کیلئے کوئی راستہ کوئی جگہہ نہیں تھی۔ ایک مسافر سے چادر لیکر اس چادر میں ان کو باندھ کر اوپر کھڑے لوگوں نے ان کو کھینچا اور سڑک تک لانے میں کامیاب ہوئے۔

اس حادثے میں مہیب ولد حبیب الرحمان سکنہ ریشن موقع پر جاں بحق ہوا جبکہ برہان الدین ولد اسرار الدین شدید زخمی ہوا ۔ مقامی لوگوں نے حادثے کی وجہ ایک تو تیز رفتاری بتائی دوسرا کم عمر لڑکوں کا موٹر سائیکل بغیر لائسنس کے چلانا ہے ۔

دوسری جانب جائے حادثہ پر کھڑے ایک شحص نے شکایت کی کہ محکمہ کمیونیکیشن اینڈ ورکس (مواصلات) کا کام اتنی ناقص ہے کہ ان کی بنائی ہوئی سڑک کے کنارے حفاظتی دیوار ایک موٹر سائیکل کو نہیں روک سکا تو بھاری گاڑی کا کیا ہوگا۔

مقامی لوگوں نے یہ بھی انکشاف کیا کہ یہ جگہہ موت کا کنواں بن چکا ہے یہاں پر کئی حادثات پیش آئے جس میں کئی قیمتی جانیں ضائع ہوچکی ہیں۔ لوگوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ اس جگہ پر ایک آر سی سی پُل تعمیر کی جائے تاکہ مستقبل میں اس قسم کے حادثات میں انسانی جانیں ضائع نہ ہو۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں