The news is by your side.

Advertisement

کراچی میں موٹرسائیکل چوری کی وارداتوں میں بچہ گینگ ملوث نکلا

کراچی: شہر قائد میں متواتر ہونے والے موٹرسائیکل لفٹنگ کے واقعات میں بچہ گینگ کےملوث ہونے کا انکشاف، تین رکن گرفتار کرلیے گئے۔

تفصیلات کے مطابق عزیزآبادپولیس نے بائیک لفٹنگ کے خلاف کامیاب کارروائی کرتے ہویے 3رکنی بچہ گینگ گرفتار کرلیا جن کے قبضے سے 7 موٹرسائیکلیں برآمد ہوئی ہیں۔

پولیس کے مطابق گینگ میں شامل ملزمان میں سے دو کی عمریں 15 سال جبکہ ایک 13 سال کا بچہ بھی شامل ہے۔ یہ بچے موٹر سائیکل چوری کرکے حب شہر کے ایک رہائشی کو فروخت کرتے تھے۔

کراچی پولیس کا کہنا ہے کہ ان بچوں کے ذریعے چرائی گئی آٹھ موٹرسائیکلیں بلوچستان سے برآمد کرنے کی کوشش کررہے ہیں ، بچوں کو فی موٹر سائیکل دو سے پانچ ہزار تک دیے جاتے ہیں۔ پولیس نے مسروقہ موٹرسائیکلیں خریدنے والے ایک شخص کو بھی حراست میں لے لیا ہے۔

حراست میں لیے گئے تیرہ سالہ بچے نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ موٹر سائیکل پر ریس لگانے کا شوق تھا ، اس لیے یہ راستہ اختیار کیا ۔ اس نے یہ بھی بتایا کہ وہ موٹرسائیکلوں کے ٹائر اور سائیلنسر بھی نکال کر فروخت کرتا تھا۔

یاد رہے کہ گزشتہ چند ماہ میں شہر میں موٹر سائیکلیں چوری ہونے کی وارداتوں میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے ۔سی پی ایل سی کی جاری کردہ ماہانہ کرائم رپورٹ کے مطابق رواں سال اپریل کے مہینے میں کراچی کے مختلف علاقوں سے 2446 موٹر سائکلیں چوری اور چھینی گئی تھیں۔

اس رپورٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے اے آئی جی امیر شیخ نے کہا تھا کہ بیش تر موٹرسائیکلیں شہر کے اندر ہی فروخت کر دی جاتی ہیں، تاہم چوری اور چھینی گئیں موٹر سائیکلیں دوسرے شہر بھی بھیجی جاتی ہیں۔

اس موقع پر انکا یہ بھی کہنا تھا کہ چوری کی گئیں موٹر سائیکلیں کھول کر ان کے اسپیئر پارٹس فروخت کر دیے جاتے ہیں، چوری کے اسپیئر پارٹس خریدنے والوں کے خلاف بھی کریک ڈاؤن کا فیصلہ کرلیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں