The news is by your side.

Advertisement

احتساب سے جمہوریت کونہیں تخت رائے ونڈ کوخطرہ ہے، بلاول بھٹو

میرپورآزاد کشمیر: بلاول بھٹو زرداری نے مخصوص انداز میں مخالفین کو للکارتے ہوئے کہا کہ احتساب سے جمہوریت کو نہیں تخت رائیونڈ کو خطرہ ہے، احتساب کے نام پر انتقامی کارروائیاں ہورہی ہیں۔

بلاول بھٹو زرداری جلسہ گاہ آئے تو شاندار استقبال ہوا انہیں روایتی پگڑی پہنائی گئی، بلاول بھٹو نے وزیراعظم کی صحت کے لیے خصوصی دعا کے کا اعلان بھی کیا۔

پی پی پی چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ تبدیلی نوٹوں سے نہیں ووٹوں سے آتی ہے، مودی کے یار پاکستان کو شریف کمپنی بنانا چاہتے ہیں، ان کا کہنا تھا کہا کہ احتساب کے نام پر میرے والد کو کسی جرم کے ثابت نہ ہونے کے باوجود گیارہ سال جیل میں رکھا گیا، آج بھی احتساب کے نام پر پیپلز پارٹی کے خلاف انتقامی کارروائی جاری ہیں،سابق صدر کا ڈاکٹر آج بھی یرغمال ہے۔

کشمیری عوام کو مخاطب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشمیرکےانتخابات عوام کی عزت اورکشمیرکامستقبل ہیں، کشمیر کے انتخابات کوئی عام انتخابات نہیں ہیں، ہمارا ہر اقدام عوام کی بہتری کے لیے ہوتا ہے، ہماراہرکام ملک وقوم کی ترقی کے لیے ہوتا ہے، ہمارا کسی سے کوئی ذاتی اختلاف نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ میاں صاحب اگر آپ کا دامن صاف ہےتوعدالتوں سےکیوں بھاگتےہیں، آج آپ کوچارٹرآف ڈیمو کریسی یادآرہاہے، جب آپ وزیراعظم بنے تو چارٹرآف ڈیموکریسی بھلادیا تھا،یہ لوگ ہمیشہ دوسروں کےکندھوں پربندوق رکھ کرچلاتےہیں۔

بلاول بھٹو زرداری نے جارحانہ خطاب کے بعد پھر نعرہ لگا گئے، مودی کے یار کو ایک دھکا اور دو، انہوں نے کہا کہ احتساب نہ کیا گیا تو میرا نعرہ ہوگا کرپشن کے سردار کو ایک دھکا اور دو۔

اس سے قبل سابق صدر آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پیپلزپارٹی اور میر پورآزاد کمشیر کارشتہ بہت پرانا ہے، عوام سےدرخواست ہےکہ پی پی امیدوار کو کامیاب بنائیں، پیپلز پارٹی عوام کی خدمت پر یقین رکھتی ہے۔

فریال تالپور نے کہا کہ ترقی کے لیےذوالفقاربھٹو کے اصولوں پرکام کرنا ہوگا، آزاد کشمیرکے عوام پیپلزپارٹی کو کامیابی دلائیں، شہید بے نظیر بھٹو کے ایجنڈے پر عمل پیرا ہیں، آزاد کشمیر کے عوام کے لیے سب سے زیادہ کام پیپلزپارٹی نے کیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں