بینظیر کو بہن کہنے والوں نے وفاداریاں تبدیل کرلیں، بلاول بھٹو -
The news is by your side.

Advertisement

بینظیر کو بہن کہنے والوں نے وفاداریاں تبدیل کرلیں، بلاول بھٹو

بدین: بلدیاتی انتخابی مہم کے آخری روزپیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے بدین میں جلسےسے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بینظیربھٹو کوبہن کہنے والے آج دشمنوں کے ساتھ مل گئےہیں۔

بلاول بھٹو نے یہ بھی کہا کہ پیپلزپارٹی عوام کے دلوں کی دھڑکن ہیں اسے کوئی ختم نہیں کرسکتا۔

بلاول بھٹو نے پیپلز پارٹی کا ساتھ چھوڑنے والوں پرانتہائی سخت الفاظ میں تنقید بھی کی اورعمران خان کو بھی نہیں چھوڑا۔

ان کا کہنا تھا کہ عمران خان سندھ کے روحانی مرشدوں کو ساتھ لئے گھوم رہے ہیں کہ ان کے مرید اپنے پیر کی ایک جھلک دیکھنے کے لئے جمع ہوجائیں۔

انہوں نے تحریک انصاف کے سربراہ پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ ’’سیاست میرے خون میں ہے، مچھلی کے جائے کو تیرنا کون سکھا سکتا ہے؟‘‘۔

انہوں نے تحریک انصاف کے تبدیلی کے نعرے کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’’ تبدیلی لانے کے لئے لیڈر کو قربانیاں دینی پڑتی ہیں‘‘۔

انہوں نے ذوالفقار مرزا کو چھپے لفظوں میں تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ محترمہ بینیظیربھٹوکو بہن کہنے والوں نے آج اپنی وفاداریاں تبدیل کرلیں ہیں، انہوں نے مزید کہا کہ ان کی والدہ کو بھی ایسے کئی افراد نے دھوکہ دیا تھا۔سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے پرپیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری سندھ کے دورے پر ہیں، بدین پہنچنے پر بلاول بھٹو کا شاندار استقبال کیا گیاتھااورڈھول کی تھاپ پرکارکنوں نے والہانہ رقص کیا۔

بلاول بھٹو کو ایک بڑی ریلی کی صورت میں بدین شہرلایا گیا جہاں کارکنوں کی ایک بڑی تعداد اپنے رہنما کی ایک جھلک دیکھنے کی منتظر تھی۔ اس موقع پر کارکنوں کاجوش و خروش دیکھنے والا تھا جو دور دراز گاؤں سے آئے تھے، ریلی میں ہزاروں کارکن شریک تھے۔

گولارچی سے بدین کا ایک گھنٹے کا سفر کئی گھنٹوں میں طے ہوا، بلاول بھٹو زرداری نے بدین شہر کا مکمل دورہ کیا اور اس کے بعد جلسے سے خطاب کرنے کے لئے اللہ والا چوک پہنچ گئے۔

بلاول بھٹوکی بدین آمد پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے، پولیس کی بھاری نفری ریلی کےراستوں اور جلسہ گاہ کےاطراف تعینات تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں