site
stats
اہم ترین

کشمیر میں ن لیگ کی حکومت بنی تو بجٹ تخت رائے ونڈ پرخرچ ہوگا،بلاول بھٹو

مفظرآباد: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ حکومت کی ناقص پالیسوں کے وجہ سے پاکستانی عوام پریشان ہیں اور حکومت صرف کرپشن کررہی ہے۔

مظفرآباد میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ ’’ 4 روز بعد کشمیریوں کے مستقبل کا فیصلہ ہونے جارہا ہے آپ پیپلزپارٹی کو ووٹ دیں تاکہ ہم آپ کی نسلوں کے مستبقل کو محفوظ بناسکیں‘‘۔

bilawal-post-2

مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی جارہیت پر بلاول بھٹو نے کہا کہ ’’کشمیری عوام میں 68 برس بعد بھی جنگ آزادی کی جدوجہد میں فرق نہیں آیا، کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی کسی کو نظر نہیں آتی اور نہ ہی اس پر حکومت کوئی اقدامات کرنے کو تیار ہے‘‘۔

انہوں نے مزید کہا کہ ’’آزاد کشمیر دستور ساز اسمبلی کے انتخابات کا تعلق کشمیر کے مستقبل سے ہے، پیپلزپارٹی کشمیریوں کی رائے شماری کے حق میں ہے اور  ماضی کی طرح اُن کے لیے بین الاقوامی فورم پر آواز اٹھانے کے اقدامات کرنے کو تیار ہے‘‘۔

مسلم لیگ ن پر تنقید کرتے ہوئے چیئرمین پیپلزپارٹی کا کہنا تھا کہ ’’اگر مسلم لیگ ن آزاد کشمیر کے الیکشن جیت گئی تو یہاں کے فنڈز بھی رائے ونڈ بھیجے جائیں گے کیونکہ میاں محمد نوازشریف وزیر اعظم نہیں بزنس مین ہیں اور وہ سیاست کو بھی کاروبار کی طرح چلا رہے ہیں‘‘۔

bilawal-post-1

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ میاں صاحب کشمیریوں کے لیے آواز اٹھانے کے بجائے بھارتی وزیراعظم کو اپنے گھر کی تقریبات کو اپنے گھر مہمان خصوصی کے طور پر مدعو کرتے ہیں اور اُن سے تحفے تحائف کا تبادلہ بھی کرتے ہیں۔

حکومتی کارکردگی پر تنقید کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ’’مسلم لیگ ن کو اقتدار میں آئے تین سال کا عرصہ ہوگیا ہے مگر عوام کے لیے کوئی نیا منصوبہ پیش نہیں کیا گیا بلکہ پیپلزپارٹی کے شروع کیے گیے منصوبوں کو  بھی مکمل نہیں کیا جارہا‘‘۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ حکومت نے جو بھی منصوبے شروع کیے اُس کا ایک ہی مقصد لوٹو اور کھاؤ ہے، پانامہ لیکس کے ٹی او آرز پر تنقید کرتے ہوئے بلاول نے نوازشریف کو کہا کہ ’’عوام آپ سے تیسری بار حساب مانگ رہی ہے اور آپ پھر بیمار پڑ گیے، ماضی میں بھی جب آپ سے حساب مانگا گیا تو آپ مشرف کے ساتھ معاہدہ کر کے خودساختہ جلاوطن ہوئے اور بھاگ گئے۔

PML-N not qualified for working on foreign… by arynews

خارجہ پالیسی پر تنقید کرتے ہوئے بلاول نے کہا کہ ’’پڑوسی ممالک سے ہمارے تعلقات مزید خراب ہوگئے ہیں ، افغانستان سمیت کوئی پڑوسی ملک اب ہمارے ساتھ مخلص نہیں ہے‘‘۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top