The news is by your side.

Advertisement

جمہوریت کے بغیر وفاق قائم نہیں رہ سکتا، بلاول بھٹو

اسلام آباد : پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ ملک میں وسائل کی منصفانہ تقسیم چاہتےہیں، جمہوریت کے بغیر وفاق قائم نہیں رہ سکتا، ریاست کی رٹ جس طرح چیلنج ہوئی اس پرافسوس ہے۔

ان خیالات کااظہار انہوں نے اسلام آباد میں پیپلز پارٹی کے 50 ویں یوم تاسیس کے موقع پرایک بہت بڑے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے ہمیشہ سر مایہ داروں اور جاگیرداروں کےخلاف بغاوت کی، ہم آزمائشوں کے جنگل سے گزرے اور مسافرآتے جاتے رہے لیکن قافلہ رواں دواں رہا، کارکنوں کوخراج تحسین پیش کرتاہوں۔

بلاول بھٹو نے پیپلز پارٹی کے منشور کا اعلان کردیا

بلاول بھٹو زرداری نے اپنے خطاب میں پیپلز پارٹی کے منشور کا اعلان کردیا، انہوں نے منشور کی تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ اقتدار میں آکر معاشی اصلاحات، لیبراصلاحات، خواتین سے متعلق اور تعلیمی اصلاحات لائیں گے تا کہ نوجوانوں کو روزگار ڈھونڈنا نہ پڑے، ان کا کہنا تھا کہ نئے منشور کے مطابق ملک میں عدالتی، پولیس اورسول سروس اصلاحات کا آغاز کیا جائے گا۔

انہوں نے پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں ہونے والی کامیابیوں کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ 71 کے بعد جب پاکستان نہیں سنبھالا گیا تو اقتدار پی پی کے حوالے کیا گیا۔

شہید بھٹو نے ادارے بنا کرعوام کو روزگار دیا، ٹوٹی ہوئی ریاست کے تنکے اکٹھےکیے،90ہزار قیدی واپس کرائے، پھر بھٹو کو پھانسی دیکریہ سمجھا گیا کہ پارٹی ختم ہوجائےگی۔

بینظیر بھٹو نے ضیاء الحق کے مارشل لاء کےخلاف جدوجہد کی، بھٹو کی بہادر بیٹی نے عوام کا ساتھ کبھی نہیں چھوڑا، بینظیر بھٹو کو عوام کی طاقت پر بھروسہ تھا، ضیاء الحق نےاپنے اقتدر کو طول دینے کیلئےاسلام کو استعمال کیا۔

ہمارااقتدار غریبوں کیلئے ہے

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ بی بی کی شہادت کے بعد حالات خراب ہورہے تھے جس کے بعد آصف زرداری نے پاکستان کھپے کا نعرہ لگایا، بی بی کی شہادت کے بعد میں نے کہا تھا کہ جمہوریت بہترین انتقام ہے اور جمہوریت ہی ملک کو متحد رکھ سکتی ہے، ہمارااقتدار غریبوں کیلئے ہے، طاقت کا سرچشمہ عوام ہے اورشہادت ہمارا عمل ہے۔

بلاول بھٹو نے مزید کہا کہ بینظیربھٹو نے بتایا تھا کہ پرویزمشرف دوغلی پالیسی پرعمل پیرا ہیں، وہ ملک سے دہشت گردی ختم کرنے کیلئےسنجیدہ نہیں، باہمت بینظیر بھٹو نےدہشت گردوں کو للکارا، بینظیر بھٹو نے ملک سے مارشل لاء ریگولیشن کا خاتمہ کیا، بینظیربھٹو نے ملکی مفاد کیلئےایف 16طیاروں کا معاہدہ کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ آصف زرداری کے دور حکومت میں سی پیک کی بنیاد رکھی گئی، ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ کیاگیا، پورےسندھ میں کام ہورہ اہے،40ڈیمز بنائے گئے ہیں، لڑکیوں کی تعلیم پرخصوصی توجہ دی جارہی ہے، طالبات کو ساڑھے3ہزار روپے ماہانہ وظیفہ دیا جارہاہے۔

بلاول بھٹو زردار ی نے کہا کہ بھٹو کے فلسفے پر عمل پیراہو کر جدوجہد جاری رکھیں گے، ہم عوام کو اقتدار کی منتقلی پر یقین رکھتے ہیں، بھٹو اور بی بی شہید کا پاکستان بنانے کے لیے کئی دریا عبور کرنے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں