The news is by your side.

Advertisement

عمران خان صرف وزیراعظم بننے کی سیاست کررہے ہیں، بلاول بھٹو

پشاور: بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ عمران خان وزیراعظم کی کرسی اور اقتدار حاصل کرنے کے لیے سیاست کررہے ہیں، ایمپائر کی انگلی کو دیکھتے دیکھتے عمران خان کی نظر کمزور ہوگئی، تبدیلی کا نعرہ لگانے والے خود تبدیل ہوگئے اور انہوں نے خیبرپختونخواہ کے وسائل پنجاب کی سیاست پر استعمال کیے جارہے ہیں۔

پشاور میں پیپلزپارٹی کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ تحریک انصاف مسلم لیگ ن کو مضبوط کرنے کی سیاست کررہی ہے، عمران خان ہر وہ کام کرنا چاہتے ہیں جس کی وجہ سے بنی گالہ کا راستہ سیدھا وزیراعظم ہاؤس پہنچے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ عمران خان ایمپائر کی انگلی کے انتظار میں اپنی نظریں کمزور کروا بیٹھے، ہم انتظار کررہے ہیں کہ ایک بار ایمپائر انگلی اٹھائے اور عمران خان ڈانس کرتے نظر آئیں۔

انہوں نے کہا کہ کے پی کے آکر ہمیشہ خوشی ہوتی ہے، عوامی رابطے کرنے کے لیے مانسہرہ، کاغان، چترال کا دورہ کیا اور آج این اے 4 کی انتخابی مہم کے سلسلے میں پشاور آیا، تیر کا مقابلہ کئی جماعتوں سے ہے، بس عوام سے کہنا چاہتا ہوں کہ فیصلہ آپ کو سوچھ سمجھ کر کرنا ہے اور 26 اکتوبر کو آپ نے جھوٹے، نااہل سیاستدانوں کوشکست دینی ہے۔

تحریک انصاف کی کارکردگی پر تنقید کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ عمران خان کے پاس کوئی ویژن نہیں، انہوں نے بلند و بانگ دعوے تو کئی مگر کوئی خاطر خواہ نتائج دیکھنے میں نہیں آئے، کے پی کے حکومت کے تمام منصوبے کرپشن کی نظر ہوئے اور کچھ لوگوں نے اپنی جیبیں بھریں۔

انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف نے صوبے کا تعلیمی اور صحت کا نظام تباہ کردیا، ینگ ڈاکٹرز اور اساتذہ آج حکومت کے خلاف احتجاج کررہے ہیں مگر پی ٹی آئی اپنی کارکردگی کے جھوٹے دعویٰ کرنے میں مصروف ہے، عمران خان خیبرپختونخواہ کی وسائل کو پنجاب کی سیاست پر استعمال کررہے ہیں۔

تحریک انصاف کے رہنماؤں نے میگا کرپشن اسکینڈل کی نشاندہی کی مگر خیبرپختونخواہ حکومت نے اُن کی تحقیقات نہیں کرنے دی جس سے واضح پیغام ملتا ہے کہ صوبائی حکومت کی کرپشن سے ترین کا جہاز اور عمران خان کا کچن چل رہا ہے، تبدیلی کا نعرہ لگانے والے آج خود تبدیل ہوچکے اور کرپٹ لوگوں کو اپنے ساتھ شامل کررہے ہیں۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ عمران خان خود اس بات کا اعتراف کرچکے ہیں کہ اگر انہیں 2013 کی حکومت مل جاتی تو وفاق کا حال بھی خیبرپختونخواہ کی طرح ہوتا۔ چیئرمین بلاول نے کہا کہ خیبرپختونخواہ کے عوام اچھی طرح جانتے ہیں کہ اُن کے حقوق کے لیے کس نے آواز بلند کی، ایف سی ایوارڈ آبادی کی بنیاد پر دیا جاتا تھا مگر ہم نے اس کو تبدیل کروایا۔

پیپلزپارٹی کے چیئرمین نے کہا کہ تحریک انصاف اور ن لیگ کی حکومتوں نے سیاست کو گندا کر دیا، آج ایک دوسرے کو گالیاں دی جاتی ہیں، دونوں جماعتوں نے عوام کے لیے نہیں بلکہ اپنے ذاتی مفاد کے لیے کی۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ جس وقت ملک دہشت گردی میں گھرا ہوا تھا تو عمران خان نے طالبان کو دفاتر کھول کر دینے کی پیش کش کی، عوام جانتے ہیں کہ وفاقی اور صوبائی حکومتوں نے آمر کی گود میں پرورش حاصل کی، امید ہے حلقہ این اے میں فتح پیپلزپارٹی کی اور شکست تحریک انصاف کا مقدر بنے گی۔

 جلسے کی تیاریاں

قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 4 میں ہونے والے ضمنی الیکشن کے سلسلے میں پاکستان پیپلزپارٹی نے پشاور کے نواحی علاقے بڈھ پیر زنگلی میں عوامی جلسہ منعقد کیا جس میں پارٹی رہنماؤں اور چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے خطاب کیا۔

خیال رہے کہ قومی اسمبلی کی یہ نشست پاکستان تحریک انصاف کے رہنما گلزار خان کی وفات کے باعث خالی ہوئی تھی۔


تحریک انصاف کےرکن قومی اسمبلی گلزارخان انتقال کرگئے


یاد رہے کہ رواں سال 28 اگست کو پشاور کے حلقہ این اے 4 سے رکن قومی اسمبلی منتخب ہونے والے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما گلزار خان علالت کے بعد انتقال کرگئے تھے۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ 8 ستمبر کو الیکشن کمیشن آف پاکستان نے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 4 میں ضمنی الیکشن کا شیڈول جاری کیا تھا، ضمنی الیکشن رواں ماہ 26 اکتوبر کو ہوگا۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں