The news is by your side.

Advertisement

بلاول بھٹو کا تھر میں یونیورسٹی بنانے کا اعلان

تھر پارکر: پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے تھر میں یونیورسٹی بنانے کا اعلان کردیا، ان کا کہنا ہے کہ سندھ کے کالے سونے سے پورا ملک فائدہ حاصل کرے گا۔

تفصیلات کے مطابق تھر میں پہلے کول پاور پلانٹ کے افتتاح کے موقع پر پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تھر کول پاور پلانٹ کا افتتاح تھر کے عوام کی کامیابی ہے، اسے کہتے ہیں گڈ گورننس، اسے کہتے ہیں میگا پروجیکٹ۔ یہ ہوتا ہے نیا پاکستان، پیپلز پارٹی نے کر کے دکھایا۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ آج کا دن پاکستان کی تاریخ کے لیے اہمیت رکھتا ہے۔ یہ وہ دن ہے جب بھٹو نے ہمیں آئین دیا۔ 1993 میں ہمیں حکومت ملی، محترمہ 1994 میں تھر پہنچیں۔ سابق وزیر اعلیٰ عبد اللہ شاہ نے تھر کوئلے کا افتتاح کیا تھا، آج 10 اپریل کو ہم دوبارہ یہاں موجود ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آج تھر کی سرزمین سے کالا سونا نکالا گیا، محترمہ نے کہا تھا پبلک پارٹنر شپ کے ذریعے ملک چلا سکتے ہیں۔ کم پیسوں سے زیادہ محنت کر سکتے ہیں آج پی پی کی کامیابی ہے۔ تھرکول پاکستان کا پبلک پارٹنر شپ کا ماڈل ہے۔ سندھ اینگرو میں 54 فیصد شیئرز سندھ کا ہے۔

بلاول کا کہنا تھا کہ سندھ کے کالے سونے سے پورا ملک فائدہ حاصل کرے گا، تھر اسلام کوٹ کے غریبوں کے بجلی کے بل سندھ حکومت ادا کرے گی۔ پہلا حق مقامی افراد کا ہے، اسے بیلنس کرنے کے لیے ہمارے پاس سسٹم نہیں، یہاں کے مقامی لوگوں کے لیے سندھ حکومت انہیں بجلی مفت دے گی۔ پورے پاکستان کو آپ کی محنت سے بجلی مل رہی ہے۔ آپ کو کچھ نہ کچھ تو ملنا چاہیئے۔

انہوں نے کہا کہ پراجیکٹ کے ذریعے ہم اسکولز اور اسپتال بنائیں گے۔ 250 بیڈز پر مشتمل اسپتال کا جلد افتتاح کریں گے۔ فش فارمنگ بھی یہاں ہو رہی ہے۔ تھر کو یونیورسٹی چاہیئے۔ این ای ڈی یونیورسٹی کا ایک کیمپس تھر میں کھولا جائے گا۔

بلاول کا کہنا تھا کہ آج کل وفاقی حکومت ہمیں پیسہ نہیں دے رہی، پاک چین کوریڈور کا تحفہ زرداری صاحب نے ہمیں دیا تھا، ساتھ دینے پر چینی دوستوں کے شکر گزار ہیں۔ پنجاب میں ڈیمز بھی بنے ہیں لیکن کوئی منصوبہ ایسا نہیں، ہم یہاں کے اسکولوں اور اسپتالوں کو بہتر بنائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں