The news is by your side.

Advertisement

بلاول بھٹو کی علی رضا عابدی کے گھرآمد، اہل خانہ سے تعزیت

کراچی: پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا کہنا ہے کہ اصل سیاستدان وہ ہے جو عوام کے مسائل حل کرے، ہمارے خلاف جعلی اور جھوٹی جے آئی ٹی رپورٹ ہے۔ عدالت میں کیس بھرپور انداز سے لڑیں گے اور سازش بے نقاب کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری آج بروز پیر متحدہ قومی موومنٹ کے سابق رہنما علی رضا عابدی کے گھر پہنچے۔ بلاول بھٹو نے علی رضا عابدی کے گھر والوں سے تعزیت کی اوران کے قتل پرافسوس کا اظہار کیا۔

بلاول بھٹو  نےعلی رضا عابدی کے قتل سے متعلق ان کے والد سے تفصیلات بھی معلوم کیں۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ علی رضا عابدی کا قتل قابل مذمت ہے۔ وہ نوجوان سیاست داں تھے، ان کی کمی محسوس ہو رہی ہے۔

بلاول کا کہنا تھا کہ علی رضا عابدی کا قتل کراچی کے لیے بہت بڑا نقصان ہے، کراچی کو ایسے نوجوانوں کی ضرورت ہے۔ امن و امان کی صورتحال سے متعلق وزیر اعلیٰ سندھ سے بات کروں گا۔

انہوں نے کہا کہ اصل سیاستدان وہ ہے جو عوام کے مسائل حل کرے، ہمارے خلاف جعلی اور جھوٹی جے آئی ٹی رپورٹ ہے۔ عدالت میں کیس بھرپور انداز سے لڑیں گے اور سازش بے نقاب کریں گے۔

بلاول نے کہا کہ ہماری توجہ دہشت گردی جیسے سنجیدہ مسائل پر ہونی چاہیئے، ہر سازش کو ناکام بنائیں گے۔ ماضی میں بھی ایسے مراحل سے گزر چکے ہیں۔ آصف زرداری 11 سال جیل میں رہے اور پھر باعزت بری ہوئے۔

یاد رہے کہ علی رضا عابدی ایم کیوایم کے سابق رہنما تھے ، سابقہ حکومت میں وہ ایم کیو ایم کے ٹکٹ پر  اسمبلی ممبر بھی رہے ، تاہم ایم کیوایم میں جاری حالیہ گروہ بندی سے نالاں ہوکر انہوں نے استعفیٰ دے دیا تھا۔

دسمبر کی 25 تاریخ کو وہ اپنے گھر واپس آئے تودروازے پر گاڑی روکتے ہی پیچھے سے دو موٹرسائیکل سوار آئے اوران میں سے ایک نے ان پر فائرنگ  کردی ، جائے وقوعہ سے پانچ گولیوں کے خول ملے ہیں جن میں سے چار انہیں لگی تھیں۔

علی رضا عابدی کے قتل کے بعد پیپلز پارٹی کے رہنما سعید غنی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ علی رضا عابدی نے سابق صدر آصف علی زرداری سے ملاقات کی تھی اور وہ پیپلز پارٹی میں شامل ہونے والے تھے ، تاہم علی رضا عابدی کے والد نے ملاقات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا تھا کہ ان کا پیپلز پارٹی میں شمولیت کا ارادہ نہیں تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں