The news is by your side.

Advertisement

بلاول بھٹو کی نیب پر کڑی تنقید، کالا قانون قرار دے دیا

اسلام آباد: چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے نیب پر کڑی تنقید کی ہے اور نیب کو کالا قانون قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ آج ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوا، آئندہ کا لائحہ عمل طے کیا گیا، گزشتہ روز سابق اپوزیشن لیڈر اور ایم این اے خورشید شاہ کو نیب نے گرفتار کیا۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ نیب سے متعلق پیپلزپارٹی کا موقف واضح ہے، نیب کالا قانون ہے، عوام کی توجہ ہٹانے کے لیے نیب کو استعمال کیا گیا، مقبوضہ کشمیر سے متعلق سیاسی رہنماؤں کی اہم کانفرنس جاری تھیں، کانفرنس کے موقع پر خورشید شاہ کو گرفتار کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر کے لیے ہم سب کچھ کرنے کو تیار ہیں، اس وقت وزیراعظم عمران خان کو عالمی سطح پر مقبوضہ کشمیر کے لیے سب کو متحد کرنا چاہئے تھا، ہمیں آپس میں لڑنے کے بجائے ایک ہوکر کشمیریوں کے لیے آواز اٹھانی چاہئے تھی۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پیپلزپارٹی کی جانب سے احتجاج کا لائحہ عمل طے کرلیا گیا ہے، معاشی پروگرام ہی ملکی مسائل کا حل ہے۔

چیئرمین پیپلزپارٹی نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان کے دھرنے کا اخلاقی حمایت کا اعلان کیا ہے، دھرنے سے متعلق کچھ تحفظات کا اظہار کیا تھا جس پر جواب نہیں ملا، آج بھی کہتے ہیں فضل الرحمان کے دھرنے کی اخلاقی اور سیاسی حمایت کرتے ہیں۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پارٹی رہنماؤں کو کہتا ہوں کہ فضل الرحمان سے ملاقات کرکے معاملات حل کریں، مولانا فضل الرحمان کے چارٹر میں کچھ مطالبات شامل کرانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ سب کے لیے یکساں احتساب اور یکساں نظام چاہتے ہیں، چاہتے ہیں جوڈیشل ریفارمز کی جائیں، عدلیہ ریفارم ہمارا پہلے بھی مطالبہ تھا اور اب بھی یہی مطالبہ ہے۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ پیپلزپارٹی آج بھی کہتی ہے ملک کے لیے سب کے ساتھ کام کرنے کو تیار ہیں، پیپلزپارٹی مذہب کے نام پر سیاست کی حمایت نہیں کرتی، ہماری جماعت پارلیمانی سیاست کرتی ہے اور کرتی رہے گی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں