امریکا نے افغان جہاد کے بعد پاکستان کو اکیلا چھوڑا، بلاول بھٹو -
The news is by your side.

Advertisement

امریکا نے افغان جہاد کے بعد پاکستان کو اکیلا چھوڑا، بلاول بھٹو

واشنگٹن : پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ پُرامن افغانستان پاکستان کےاستحکام کے لیےبہت اہمیت رکھتا ہے تاہم اب بھی افغانستان کوامن کے عمل میں پہل کرنا ہوگی۔

وہ امریکی تھنک ٹینک یوایس آئی پی سے خطاب کر رہے تھے انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس کے باوجود امریکا نے افغان جہاد کے بعد پاکستان کواکیلاچھوڑ دیا تھا ایک بار پھرامریکا کےاتحادی بن جائیں گے اور انٹرنیشنل آرڈرکی ناکامی نےگہرے اثرات چھوڑے۔

بلاول بھٹو نےمسلم ممالک پرامریکی پابندیوں اور باہمی تعلقات پراظہارخیال کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستانی شہریوں اور فوج نےقربانیاں دیں اور اب بھی پاک فوج دہشت گردوں کے خلاف کارروائیاں کر رہی ہے اورساری دنیا کی بقا کی جنگ لڑ رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ طالبان کومذاکرات کی میزپرلاناصرف پاکستان کی ذمےداری نہیں پاکستان30سال سےافغان مہاجرین کی مہمان نوازی کررہا ہے اور میرے ہی والد نے 18ویں ترمیم کےتحت سوشل کنٹریکٹ دیا تھا۔

پاک بھارت تعلقات کے حوالے سے بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ کشمیر2ایٹمی طاقتوں کےدرمیان سنگین تنازع بناہوا ہے جسے عالمی برادری کو اقوام متحدہ کی پاس کردہ قراردادوں کے تحت حل کروانے میں اپنا موثر کرادر ادا کرنا چاہیے جب کہ پاک و بھارت کشیدگی میں امید کرتا ہوں کہ بھارت پانی کو بطور ہتھیار استعمال نہیں کرے گا۔

انہوں نے مزید کہا کہ میری والدہ نے پاکستان میں جمہوریت کے لیے صعوبتیں برداشت کیں اور اسیری و جلا وطنی تک کاٹی جب کہ انتہا پسندی اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں اپنی جان کی قربانی بھی دی تب کہیں جا کے پاکستان میں جمہوریت بحال ہوئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں