The news is by your side.

Advertisement

پیپلز پارٹی ایسا کوئی قدم نہیں اٹھائے گی جس سے جمہوریت کو نقصان ہو: بلاول بھٹو

اسلام آباد: پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی ایسا کوئی قدم نہیں اٹھائے گی جس سے جمہوریت کو نقصان ہو، ہم ظلم برداشت کرنے کو تیار ہیں مگر سمجھوتہ نہیں کریں گے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے والد آصف علی زرداری کی پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آج ایک سال گزر گیا ہے صرف ایک ریفرنس فائل ہوا، اس ریفرنس میں بھی صرف ڈیڑھ کروڑ کا الزام ہے۔

بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ ابھی تک ریفرنس میں کوئی ثبوت پیش نہیں کیا گیا، جھوٹے الزام لگا کر دباؤ میں ڈالنے کی کوشش کی جارہی ہے۔ آصف زرداری نے پہلے بھی بغیر کسی جرم کے ساڑھے 11 سال جیل کاٹی۔ آصف زرداری اب بھی جیلیں کاٹنے کو تیار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی 1973 کے آئین اور 18 ویں ترمیم پر سمجھوتہ نہیں کریں گے، پیپلز پارٹی کو صوبے کے عوام کی خدمت نہیں کرنے دی جارہی۔ حکومت نے نوجوانوں کو بے روزگار کردیا مگر ایک نوکری نہیں دی۔

بلاول کا کہنا تھا کہ ہم ان کا ظلم برداشت کرنے کو تیار ہیں مگر سمجھوتہ نہیں کریں گے، ہر ادارے کو اپنا کام کرنا پڑے گا۔ ہر ادارہ اپنا کام کرے گا تو ہم عوام کے مسائل حل کر پائیں گے۔ پارلیمان میں عوامی مسائل پر بات نہیں ہوتی۔

انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمٰن نے 27 اکتوبر کو یوم سیاہ کا اعلان کیا ہے، مولانا فضل الرحمٰن کی کس حد تک مدد کر سکتے ہیں پارٹی اجلاس بلایا ہے۔ اکتوبر کے بعد ہم جنوبی پنجاب میں عوام سے رابطے کریں گے ۔ معاشی بحران کا مقابلہ کرنا ہے تو پیپلز پارٹی ہی کر سکتی ہے۔

بلاول کا کہنا تھا کہ پیپلز پارٹی ایسا کوئی قدم نہیں اٹھائے گی جس سے جمہوریت کو نقصان ہو، اپوزیشن جماعتوں کے پاس سڑکوں پر نکلنے کے سوا کوئی راستہ نہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں