بلاول بھٹو زرداری آج اپنی 28ویں سالگرہ منا رہے ہیں -
The news is by your side.

Advertisement

بلاول بھٹو زرداری آج اپنی 28ویں سالگرہ منا رہے ہیں

کراچی : پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری آج اپنی اٹھائیسویں سالگرہ منا رہے ہیں، بلاول بھٹو کا شمار وطن عزیز کی ان سیاسی شخصیات میں ہوتا ہے کو اپنے خاندانی پس منظر ، عوام میں مقبولیت اور سیاسی بصیرت کے حوالے سے خاص مقام رکھتے ہیں۔
bilawal-8

بلاول بھٹو زرداری 21ستمبر 1988ء کو ملک کے نمایاں سیاسی خاندان میں پیدا ہوئے، بلاول بھٹو زرداری سابق وزیراعظم ذوالفقار علی بھٹو کے نواسے، بے نظیر بھٹو اور سابق صدر پاکستان آصف علی زرداری کے بڑے فرزند ہیں، ان کی پیدائش کے تین ماہ بعد ہی ان کی والدہ بینظیر بھٹو پاکستان اور مسلم دنیا کی پہلی خاتون وزیر اعظم بنیں۔

bilawal3

انھوں نے ابتدائی تعلیم کراچی کے تعلیمی اداروں میں حاصل کی ۔ انھوں نے فوربلز انٹرنیشنل اسکول اسلام آباد سے بھی ابتدائی تعلیم حاصل کی۔ لیکن 1999ء میں اپنی والدہ کی خود ساختہ جلا وطنی کے وقت وہ ان کے ساتھ ہی بیرون ملک چلے گئے اور اپنی تعلیم راشد پبلک اسکول دبئی میں جاری رکھی۔ جہاں وہ اسٹوڈنٹ کونسل کے نائب چیئرمین تھے۔

کچھ عرصہ دبئی میں رہنے کے بعد برطانیہ میں آکسفورڈ یونیورسٹی میں داخلہ لیا، اسی یونیورسٹی میں ان کے نانا اور والدہ نے بھی تعلیم حاصل کی تھی۔

bilawal-2

bilwal-1

bilwal-7

والدہ کی شہادت کے بعد بلاول بھٹو پارٹی کے سربراہ منتخب ہوئے لیکن اپنی تعلیمی مصروٖفیات کے باعث پارٹی کی ذمہ داریاں سنبھال نہ سکے۔

bilawal4

اپنی والدہ کی موت کے وقت بلاول بھٹو لندن میں تھے اور وہ ان کی تدفین میں شرکت کے لیے پاکستان آئے، دو بار ملک کی وزیراعظم رہنے والی محترمہ بھٹو نے اپنی وصیت میں اپنے شوہر آصف علی زرداری کو اپنا سیاسی جانشین مقرر کیا لیکن انھوں نے بلاول کو پارٹی کا چیئرمین نامزد کردیا۔

bilawal-5

بینظیر کے تدفین کے بعد آصف زرداری نے بلاول زرداری کا نام تبدیل کرتے ہوئے اسے بلاول بھٹو زرداری کر دیا۔ کیونکہ پیپلز پارٹی اپنے بانی ذوالفقار علی بھٹو کی کرشماتی شخصیت کے باعث پانے والی شہرت کو نہیں کھونا چاہتی تھی اور “بھٹو عنصر” کا استعمال ہی بلاول کے نام کی تبدیلی کا باعث بنا۔

اسی طرح اپنی دونوں بیٹیوں کے نام بھی بختاور بھٹو زرداری اور آصفہ بھٹو زرداری رکھے۔

bila-6

 

تعلیم مکمل کرنے کے بعد بلاول 2011ء میں وطن واپس آئے اور سیاسی معاملات میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیا، بلاول بھٹو نے اپنی پہلی سیاسی تقریر اپنی والدہ محترمہ بے نظیر بھٹو کی 5ویں برسی کے موقع پر کی، بلاول بھٹو نے پہلی تقریر میں اپنے نانا کا انداز اپنایا۔

bila

پارلیمان کا رکن بننے کے لیے کم ازکم عمر 25 سال ہے اور اسی قانون کو مدنظر رکھتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری نے 2013ء کے انتخابات میں حصہ نہیں لیا۔

bilawal6

دوسری جانب پیپلز پارٹی کے اعلٰی حلقوں کا کہنا ہے کہ بے نظیر بھٹو نے اپنی وصیت میں انتقال کے بعد آصف زرداری کو جماعت کی قیادت دینے کا مطالبہ کیا تھا لیکن آصف نے قیادت کا بوجھ بلاول کے کاندھوں پر ڈال دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں