site
stats
اہم ترین

سب مل کر تخت لاہورکی آمریت کو گرائیں گے، بلاول بھٹو

لاہور: پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ لاہور پیپلز پارٹی کی جائے پیدائش ہے، آج سے 49 سال قبل اسی تاریخی شہر نے میرے نانا شہید ذوالفقار علی بھٹو کو عزت دی تھی اور یہاں سے پیپلز پارٹی نے اپنے سفر کا آغاز کیا تھا، میں نے بھی اسی شہر کو انقلاب کیلیے چنا ہے، آج کا یوم تاسیس مرحوم جہانگیر بدر کے نام کرتا ہوں۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے لاہور میں پیپلز پارٹی کے 49 ویں یوم تاسیس کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا، بلاول بھٹو نے کہا کہ 10 اپریل 1986 کو جب بے نظیر بھٹو لاہور آئیں تھیں تو اہالیان لاہور نے ان کا والہانہ استقبال کیا۔

 

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پیپلزپارٹی چاروں صوبوں کی زنجیر ہے، اس ملک کو آئین پیپلز پارٹی نے دیا، پورے ملک میں جمہوری انقلاب لائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی کشمیر،گلگت بلتستان اور چاروں صوبوں کی زنجیر ہے،ہم ضلعی سطح پر پارٹی کو منظم کریں گے،پارٹی کو نیا منشور دیں گے،ہم انٹرا پارٹی انتخابات کی جانب بڑھ رہے ہیں،ایک نئی پیپلز پارٹی لاہور میں جنم لے رہی ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ بھٹو سڑکوں پر نکلا تو پورا ملک سڑکوں پر آجائے گا، ہمارے چار مطالبات نہ مانے گئے تو 27 دسمبر کو دما دم مست قلندر ہوگا، سب مل کر تخت لاہورکی آمریت کو گرائیں گے۔

بلاول بھٹو زرداری نے اپنے خطاب میں مزید کہا کہ جب بی بی شہید لاہور آئی تھیں تو انہوں نے جلسے میں ایک نظم پڑھی تھی جو میں آج آپ کو پڑھ کر سنا رہا ہوں
ویڈیو دیکھیں

بے نظیر شہید نے کم عمری میں ملک کی باگ ڈور سنبھالی ، وہ چاہتی تو دھرنا بھی دے سکتی تھیں انہوں نے کبھی کسی سڑک پر دھرنا نہیں دیا تھا، بی بی نے کسی ریاستی ادارے پر حملہ نہیں کیا ، وہ صرف سیاسی رہنما نہیں بلکہ بے نظیر لیڈر تھیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ یہ کیسا انصاف ہے کہ وزیراعظم کے شاہی خاندان کیلیے ایمنسٹی ؟ اور شہید بھٹو کیلیے پھانسی اور شہید محترمہ کے قاتلوں کیلیے آزادی ہے۔ ہم ملک میں مساوات کا نظام لائیں گے،بلاول آئے گا،بلاول آئے گا انقلاب لائے گا۔

 

انہوں نے کہا ہے کہ شیر نے بلی بن کر بھاگنے کی کوشش کی تو بھاگنے نہیں دیں گے ،بی بی کی طرح جمہوری طریقے استعمال کریں گے۔

 

انہوں نے کہا کہ میں سندھ میں تبدیلی لایا ہوں،پارٹی میں بھی تبدیلی لارہا ہوں،آپ میرا ساتھ دیں تو پورے ملک میں انقلاب لائیں گے،حکومت نے ہماری چار ڈیمانڈز پوری نہیں کی ہیں،میں جمہوریت،پارلیمان کو مضبوط کرنے کی بات کررہا ہوں،جمہوری احتساب،انصاف کی بات کررہا ہوں۔

قمر زمان کائرہ کا خطاب

اس سے قبل شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر قمر زمان کائرہ کا کہنا تھا کہ کہ پورے پنجاب میں جا کر اپنے ناراض کارکنان کو منائیں گے، ہم سب کو ساتھ لے کر چلیں گے۔

انہوں نے کارکنان کو خوشخبری سنائی کہ آصف علی زراداری جلد وطن واپس آرہےہیں۔ سابق صدر کی وطن واپسی میں کوئی رکاوٹ نہیں۔ انہوں نے کہا کہ ’’ فیصلہ ہو نہیں رہا۔۔۔ فیصلہ ہوچکا ہے‘‘

قمرزمان کائرہ نے کہا کہ پارٹی کے شریک چیئرمین کب اور کہاں آئیں گے یہ فیصلہ پارٹی کرےگی، قمرزمان کائرہ نے سابق آرمی چیف جنرل (ر) راحیل شریف کو خراج تحسین پیش کیا۔

 

انہوں نے کہا کہ نئے آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سے قوم کو بہت سی امیدیں وابستہ ہیں صدر پیپلز پارٹی پنجاب نے کہا کہ دنیا بھر میں پاکستان کا مؤقف پیش کرنے کیلئے وزیرخارجہ ضروری ہے۔

قمر زمان کائرہ نے کہا کہ پیپلز پارٹی بنی تو لوگوں نے کہا کہ یہ چند نوجوانوں کی پارٹی ہے بہت جلد ختم ہوجائے گی لیکن شہید ذوالفقار علی بھٹو کی قیادت میں اسی پارٹی نے اپنے آپ کو ثابت کیا کہ یہ ملک کی سب سے بڑی جماعت ہے۔ 2018ءمیں اپنی حکومت بنائیں گے،شہباز شریف کی شوبازیاں اور کپتان کی قلابازیاں نہیں چلیں گی،میاں صاحب 27دسمبر سے قبل مطالبات مان لیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top