The news is by your side.

Advertisement

پیپلز پارٹی شکست کے باوجود ہر فورم پر کشمیر کے لیے جدوجہد کرے گی، بلاول بھٹو

کراچی: پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے آزاد جموں و کشمیر کے انتخابات میں حکمراں نواز لیگ اور ان کے وزیروں کی جانب سے ” قبل از انتخابات دھاندلی“ کی مذمت کرتے ہوئے خبردار کیا کہ اس متنازعہ جیت کا مطلب پاکستان پیپلزپارٹی کی شفاف جمہوریت کے لیے جاری کاوشوں کو دگنا کرنا ہے جس کا آغاز پانامالیکس پر احتساب سے ہوتا ہے۔

جاری کردہ بیان میں بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ نواز لیگ حکومت نے کشمیر کونسل کے فنڈز استعمال کرتے ہوئے اپنے پارٹی عہدیداران کے ہاتھوں ٹرانفارمر بانٹنے سمیت تمام غیر آئینی اور غیر قانونی طریقے استعمال کرکے کشمیری عوام کا مینڈیٹ چرایا، انہوں نے کہا کہ اتنے بڑے پیمانے پر دھاندلی اور ہیرا پھیری کے باوجود بھی پیپلزپارٹی نے قوم کے وسیع ترمفاد اور جمہوری عمل کو آگے بڑہانے کے لیے انتخابی نتائج قبول کیے۔

انہوں نے ایک بار پھر یقین دلاتے ہوئے کہا کہ پاکستان پیپلزپارٹی کا یہ عزم ہے کہ وہ انتخابی نتائج کو ایک طرف رکھ کر ہر فورم پر کشمیر کے لیے جدوجہد کرے گی،کیونکہ کشمیر پاکستان اور پیپلزپارٹی کے دلوں میں موجود ہے،بلاول بھٹو زرداری نے مزید کہا کہ نواز حکومت کے جہاں بس چلے عوامی مینڈیٹ کو چرانے کے لیے طریقے متعارف کرانے اور انتخابی نظام کی توسط سے جمہوریت کو کمزور کرنے کی کاوشوں کے خلاف پیپلزپارٹی مزاحمت کرے گی۔

انہوں نے کہا کہ شفاف جمہوریت کو تب ہی یقینی بنایا جا سکتا ہے جب پانامالیکس میں آزاد انکوائری کرائی جائے گی،کیونکہ جو ممالک اس اسکینڈل میں شامل تھے وہاں انکوائریز شروع ہو چکی ہیں یہاں تک کہ وزراء اعظم اور وزراء مستعفی بھی ہو ئے ہیں لیکن یہاں پاکستان میں نواز لیگ حکومت پانامالیکس پر خاموشی کرانے کی کوشش کرتے ہوئے اپنی آف شور کمپنیز پر انکوائری سے گریز کر رہی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں