site
stats
عالمی خبریں

مکہ کرین حادثہ: بن لادن کمپنی واقعے کی ذمہ دارقرار

ریاض: سعودی عرب کے شاہی دیوان نے خانہ کعبہ میں کرین سانحے میں بن لادن گروپ کو مورد الزام ٹہراتے ہوئے بلیک لسٹ کردیا ہے۔

عرب ٹی وی کے مطابق حرم میں گرنے والی کرین بن لادن گروپ کی ملکیت تھی اور توسیعی کاموں کا ذمہ بھی مذکورہ کمپنی کے پاس تھا۔

سعودی شاہی دیوان نے سانحے کے دہشت گردی کے امکان سے خارج قرار دیتے ہوئے تکینیکی غلطی قراردیا ہے۔

شاہی دیوان کے مطابق ’’حادثہ کرین کی غلط پوزیشن کے سبب پیش آیاہے، ابتدائی تفتیش میں کسی قسم کی مجرمانہ سرگرمی ثابت نہیں ہوئی ہے‘‘۔

شاہی دیوان نے بن لادن گروپ کو اس سانحے کا ذمہ دار ٹہراتے ہوئے بلیک لسٹ قراردے کرمذکورہ کمپنی کے عہدیداران کے ملک چھوڑنے پر پابندی عائد کردی ہے۔

شاہی دیوان کی جانب سے جاری کردہ اعلامیے کے مطابق بن لادن گروپ کو اس حادثے کے سبب آئندہ کسی قسم کے منصوبے پرکام کرنے کی اجازت نہیں ملے گی۔

شاہی دیوان نے حادثے میں شہید ہونے والے افراد کے لواحقین کے لئے 10 لاکھ ریال امداد کا بھی اعلان کیا ہے۔

یاد رہے کہ جمعہ کو نمازِ مغرب سے کچھ دیر قبل حرم شریف میں دنیا کی دوسری بڑی کرین تیز ہوا اور بارش کے سبب گرگئی تھی، کرین حادثہ میں ایک سو سات عازمین حج شہید جبکہ دوسو سے زائد زخمی ہوئے تھے۔

حادثے میں 6 پاکستانی شہری شہید جبکہ 26 زخمی ہوئے تھے جنہیں سعودی عرب کے مختلف اسپتالوں میں طبی امداد فراہم کی جارہی ہے۔

واضح رہے کہ بن لادن گروپ القائدہ کے سابق رہنما اسامہ بن لادن کے خاندان کی ملکیت ہے جسے مئی 2011 میں امریکی نیوی سیلز نے پاکستان کے بالائی علاقے میں ایک آپریشن میں قتل کیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top