The news is by your side.

Advertisement

بسمہ کی ہلاکت کی تحقیقات مکمل، ذمہ داروں کے خلاف مقدمہ درج کرنے کی سفارش

اہبٹ آباد: ایوب میڈیکل کمپلکس ایبٹ آباد میں بارہ سالہ بچی بسمہ حبیب کی ہلاکت کی انکوائری مکمل کر لی گئی ہے اورایک ڈاکٹراورنرس کو بچی کی ہلاکت کا ذمہ دارقراردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سرجیکل وارڈ اے کے ہاؤس آفیسرڈاکٹر ودود اور نرس شمسہ کو بچی کی ہلاکت کا ذمہ دار قراردے کردونوں کو اسپتال ٹریننگ سے روک دیا گیا ہے۔انکوائری رپورٹ میں انہیں معطل اورمقدمہ درج کرنے کی بھی سفارش کی گئی ہے۔

اے آروائی نیوز نے چند روز قبل ڈاکٹر اور نرس کی غفلت سے غلط انجکشن لگانے سے مانسہرہ کی رہائشی بارہ سالہ بچی بسمہ حبیب
کی ہلاکت کی خبر نشر کی تھی، بارہ سالہ بسمہ حبیب کومے میں چلی جانے کے بعد اسپتال میں دم توڑ گئی تھی جس کی موت کی تحقیقات کیلئے ڈاکٹر خالد خان کی سربراہی میں تحقیقاتی کمیٹی قائم کی گئی تھی۔

کمیٹی نے اپنی رپورٹ مکمل کرتے ہوئے شعبہ سرجیکل وارڈ اے کے ہاؤس آفیسرڈاکٹر ودود اور نرس شمسہ کو بچی کی ہلاکت کا ذمہ دارقرار دیتے ہوئے دونوں کو اسپتال کی ٹریننگ سے روک دیا،اور اسپتال انتظامیہ کو ان کو معطل اور ان دونوں کے خلاف فوجداری مقدمہ درج کرنے کی سفارش کردی ہے۔

دوسری جانب تحقیقاتی کمیٹی کے چئیرمین ڈاکٹرخالد خان جوخود متعلقہ شعبے کے انچارج تھے انہیں کمیٹی کا سربراہ بنانے پربھی اعتراض اٹھائے گئے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں