The news is by your side.

Advertisement

ضلع ہرنائی کی بیوہ خواتین 18 ماہ سے بے نظیرانکم سپورٹ سے محروم

ہرنائی : ضلع ہرنائی کے غریب ، بیواہ خواتین نے چیئرمین بےنظیرانکم سپورٹ پروگرام پاکستان سے مطالبہ کیا ہے کہ بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام کے ان بیوہ ، غریب ، بے سہارا خواتین جنہیں ڈاکخانہ کے ذریعے بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام کی امدادی رقم ملتی وہ18 مہینے سے ضلع ہرنائی کے مستحق خواتین کو نہیں ملا ہے جبکہ بلوچستان کے اکثر اضلاع کو بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام ڈاکخانہ کے ذریعے حال ہی میں رقم تقسیم ہوچکی ہے اور ضلع ہرنائی کے خواتین تاحال محروم ہے۔

انہوں نے کہاکہ وہ روزانہ اس آس میں پوسٹ آفس جاتے ہے کہ شاہد آج ہمیں بےنظیر انکم سپورٹ کی رقم ڈاکخانہ سے مل جائے لیکن پوسٹ آفس کے عملہ کا کہنا ہے کہ ابھی تک ضلع ہرنائی میں ڈاکخانہ / پوسٹ کے ذریعے سے کسی بھی مستحق خاتون کا رقم نہیں آیا ہے خواتین نے پریس کلب ہرنائی میں مقامی صحافیوں کو بتایا کہ 18 ماہ سے ہمیں رقم نہیں ملا ہے ۔

انہوں نے کہاکہ بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام کی جانب سے مستحقین کو پوسٹ آفس اور اے ٹی ایم کارڈ کے ذریعے مستحق خواتین کو رقم فراہم کی جارہی ہیں اے ٹی ایم کارڈ ہولڈر ز خواتین کو تو بقاعدگی سے رقم مل رہی ہیں تاہم پوسٹ آفس کے زریعے جن مستحق خواتین کو رقم فراہم کی جارہی ہیں وہ ملک بھر خصوصاََ بلوچستان اکثر اضلاع کو رقم جاری ہوچکا ہے لیکن ضلع ہرنائی مستحق خواتین جنہیں پوسٹ آفس / ڈاکخانہ کی زریعے ملنے والی رقم گزشتہ18 مہینے سے نہیں ملا ہے ۔

انہوں نے وزیراعظم پاکستان ، چیئرمین بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام پاکستان ،اور ڈی جی بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام کوئٹہ بلوچستان اور ڈویژنل ڈائریکٹر انکم سپورٹ پروگرام سے اپیل کی ہے کہ وہ ضلع ہرنائی کے غریب بے سہارا، بیواہ خواتین کو پوسٹ آفس کے زریعے رقم کی فراہم کی جائے غریب خواتین نے مقامی صحافیوں کو بتایا کہ بےنظیر انکم سپورٹ پروگرام کی رقم 18 مہینے سے نہ ملنے کی وجہ سے ہمارے گھروں میں فاقے ہے ۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں