The news is by your side.

Advertisement

بٹ کوائن کی قیمت تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی

ڈیجیٹل کرنسی کے طور پر استعمال ہونے والے بٹ کوائن کی قیمت تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔

اقتصادی جریدے فوربز کی رپورٹ کے مطابق ایک بٹ کوائن کی قیمت 36 ہزار ڈالرز کی بلندی کا ریکارڈ بھی توڑ چکی ہے، اس سے قبل ماضی میں کبھی قیمت اتنی اوپر نہیں پہنچی تھی۔

گزشتہ کئی روز سے کرپٹو کرنسی کی افادیت کے حوالے سے لوگوں کو قائل کرنے کی کوشش بھی کی جارہی ہے جس کے بعد قیمتوں میں ہوشربا اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے۔

کوائن ڈیسک ڈیٹا کی جانب سے جاری ہونے والی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ آج شام چار بجے تک بٹ کوائن کی قیمت 36 ہزار 462 ڈالرز تک پہنچ گئی جو پاکستانی کرنسی کے حساب سے 61 لاکھ5 ہزار 917 روپے کے قریب بنتی ہے۔

ایک روز قبل بٹ کوائن کرنسی نے نیا سنگ میل عبور کیا تھا کیونکہ قیمت 36 ہزار ڈالرز تک پہنچ گئی تھی۔

مزید پڑھیں: بٹ کوائن کی قیمت میں ریکارڈ اضافہ

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گزشتہ ایک سال کے دوران بٹ کوائن کی قیمت میں 800 فیصد اضافہ ہوا کیونکہ مارچ 2020 میں اس کی قیمت صرف 4 ہزار ڈالرز تھی۔

واضح رہے کہ کرپٹو کرنسی کو ابھی تک ریگو لائیز نہیں کیا گیا ہے، اس لیے عام لوگ خریداری سے گریز کررہے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق 16 دسمبر 2020 کو تقریبا تین ہفتے قبل پہلی بار دنیا کی سب معروف کرپٹوکرنسی نے 20 ہزار ڈالرز کی حد کو عبور کیا تھا۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال کے آخری ایام 27 دسمبر کو بٹ کوائن نے 28 ہزار ڈالرز کی حد کو عبور کیا تھا تاہم 28 دسمبر کو وہ کچھ کم ہوکر 26 اور 27 ہزار ڈالرز کے درمیان آگئی تھی۔

معاشی تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ بٹ کوائن کی قیمتوں میں یک دم اضافہ کوئی نیا نہیں کیونکہ اس سے قبل 2017 میں بھی ایسا دیکھا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں