The news is by your side.

Advertisement

بھارت: بی جے پی کا ایک اوررہنما خاتون سے زیادتی کے الزام میں گرفتار

اترپردیش: بھارتی پولیس نے بھارتی جنتا پارٹی (بی جے پی) لیڈر کنہیا لال مشرا کو 32 سالہ خاتون کے ریپ کے الزام میں گرفتار کرلیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق اتر پردیش سے تعلق رکھنے والی 32 سالہ خاتون نے الزام عائد کیا کہ میں جب بھارتی حکمران جماعت بی جے پی کے لیڈر کنہیا لال مشرا سے ملنے ان کے گھر گئی تو انہیں زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔

متاثرہ خاتون کے مطابق بی جے پی لیڈر کنہیا لال مشرا ان سے چند مہینوں سے بذریعہ فون رابطے میں تھے گزشتہ روز انہوں نے فون کال پر ملنے اور سرکاری نوکری دینے کی یقین دہانی کرائی، متاثرہ خاتون نے الزام عائد کیا ہے کہ مشرا نے انہیں متعدد بار زیادتی کا نشانہ بنایا۔

بھارتی پولیس کے مطابق خاتون کا کہنا ہے کہ کنہیا لال مشرا کے کمرے کے باہر دیگر لوگ بھی موجود تھے جو نہایت ہی خطرے کی بات تھی، تاہم میں نے فوری طور پر پولیس کو کال کی جب پولیس پہنچی تو سارے معاملات سے آگاہ کیا پولیس نے بی جے پی لیڈر کو گرفتار کرلیا۔

سگرا پولیس اسٹیشن کے آفیسر ستیش سنگھ کا کہنا ہے کہ کنہیا لال مشرا کے خلاف انڈین پینل کورٹ کے تحت مقدمہ درج کرکے تفتیش کا آغاز کردیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ بھی بی جے پی کے لیڈر کلدیپ سینگر کو ریپ کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا اور سی بی آئی اس کیس کی تفتیش کررہی ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں