The news is by your side.

Advertisement

بی جے پی کے لیڈر نے شاہ رخ خان کو ملک دشمن قرار دے دیا

نئی دہلی : بی جے پی کے لیڈر کیلاش وجے ورگیانے نے شاہ رخ خان کو ملک دشمن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ شاہ رخ خان رہتے تو بھارت میں ہیں لیکن دل پاکستان میں ہے.

بھارت کی ایک انتہا پسند ہندو تنظیم وشوا ہندو پریشد کی رہنماء سادھوی پراچی کے بعد بی جے پی کے لیڈر کیلاش وجے ورگیا نے نے شاہ رخ خان کے بیان پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ شاہ رخ خان رہتے تو بھارت میں ہیں لیکن دل پاکستان میں ہے، شاہ رخ خان فلموں سے کروڑوں روپیہ بناتے ہیں لیکن بھارت انہیں عدم برداشت والا ملک لگتا ہے، یہ ملک دشمنی نہیں تو اور کیا ہے۔

ٹوئیٹر پر جاری ہونے والے اپنے پیغام میں کیلاش وجے ورگیہ کا کہنا تھا کہ یہ ملک دشمنی نہیں تو اور کیا ہے کہ ایک ایسے وقت میں جب بھارت اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل میں مستقل رکن بننے کی کوشش کر رہا ہے تو پاکستان سمیت اس کے حامی بھارت کی کوششوں کو سبوتاژ کرنا چاہتے ہیں.

کیلاش وجے ورگیہ کا کہنا ہے کہ جب 1993 میں ممبئی میں دھماکے ہوئے اس وقت شاہ رخ خان کہاں تھے جب 26/11 کو ممبئی پر حملہ ہوا اس وقت شاہ رخ خان کہاں تھے؟

اس سے قبل گزشتہ روز بھارت کی ایک انتہا پسند ہندو تنظیم وشوا ہندو پریشد کی رہنماء سادھوی پراچی نے شاہ رخ خان کو پاکستانی ایجنٹ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ شاہ رخ خان پر غداری کا مقدمہ چلایا جانا چاہئے اور انہیں پاکستان بھیج دینا چاہئے۔

واضح رہے کہ شاہ رخ خان اپنی پچاس ویں سالگرہ کے موقع پر بھارت میں بڑھتی ہوئی انتہا پسندی پر تشویش کا اظہارکرتے ہوئے کہا ہے کہ ملک میں ’’عدم برداشت اپنی انتہا پر‘‘ہے۔
۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں