The news is by your side.

Advertisement

پشاور: اے این پی کی کارنر میٹنگ میں خودکش دھماکا، ہارون بلور سمیت 13 شہید

پشاور: خیبرپختونخواہ کے علاقے یکہ توت میں اے این پی کی کارنر مٹینگ کے دوران خودکش دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں ہارون بلور سمیت 13 افراد شہید جبکہ35 سے زائد افراد زخمی ہوگئے۔

نمائندہ اے آر وائی عدنان طارق کے مطابق صوبائی اسمبلی کے حلقے  پی کے 78  میں عوامی نیشنل پارٹی کے امیدوار یکہ توت کے علاقے میں منعقدہ کارنر مٹینگ میں جیسے ہی پہنچے تو مرکزی دروازے پر زور دار دھماکا ہوا۔

عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما بشیر بلور کے صاحبزادے اور پی کے 78 کے امیدوار بھی دھماکے کے نتیجے میں شدید زخمی ہوئے جبکہ اے این پی کے کارکنان اور میٹنگ میں شرکت کرنے والے عوام بھی شدید زخمی ہوئے۔

تمام زخمیوں کو پشاور کے لیڈی ریڈنگ اسپتال منتقل کیا گیا جبکہ جائے وقوعہ کو قانون نافذ کرنے والے اداروں نے گھیرے میں لے کر شواہد اکھٹے کیے۔ ذرائع کے مطابق ہارون بلور کو شدید تشویشناک حالت میں اسپتال منتقل کیا گیا مگر وہ جانبر نہ ہوسکے، امیدوار کے چچا الیاس بلور نے ہارون بلور کے جاں بحق ہونے کی تصدیق بھی کردی۔

بم ڈسپوزل اسکواڈ اور ایس پی سی ٹی ڈی کے مطابق دھماکا خودکش تھا جس میں 10 سے 12 کلو بارود استعمال کیا گیا تھا۔ نگراں وزیراطلاعات خیبرپختونخواہ ظفراقبال بنگش نے اے آر وائی نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’حکومت نے اپنے طور پر مکمل اقدامات کیے مگر خودکش دھماکے کی کارروائیوں کو کسی صورت نہیں روکا جاسکتا، فی الحال میرے پاس اطلاعات نہیں جیسے ہی معلومات آئیں گی آگاہ کروں گا‘۔

لیڈی ریڈنگ کے ترجمان نے 12 افراد کی شہادت کی تصدیق کردی جبکہ 35 سے زائد افراد کو زخمیوں کو اسپتال منتقل کیا گیا۔

الیاس بلور نے اے آر وائی سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’ہمیں کوئی دھمکیاں نہیں ملیں ،سیاسی مہم چلارہےتھے، میں اسٹیج پر بیٹھا تھا، ہارون کے گاڑی سے اترتے ہی دھماکا ہوگیا‘۔

سی سی پی او پشاور نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ’ہارون بلور کی سیکیورٹی پر 2 اہلکار تعینات اور وہ انتخابی مہم کے سلسلے میں یکہ توت آئے تھے، دھماکےمیں اب تک 12افرادشہیدہوئے جبکہ واردات میں 10 سے 12 کلو دھماکا خیز مواد استعمال کیا گیا‘۔

بعد ازاں عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما میاں افتخار حسین نے اے آر وائی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اے این پی کو ایک بار پھر نشانہ بنانے کی کوشش کی جارہی ہے، ہارون بلور کا نماز جنازہ آج شام 5 بجے وزیر باغ میں ادا کیا جائے گا جس کے بعد ہم اپنے آئندہ کے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔

دھماکے سے چند لمحے قبل کی فوٹیج

واضح رہے کہ اس سے قبل 22 دسمبر 2012 اے این پی کے رہنما بشیر احمد بلور کو شہید کیا گیا تھا، اس سانحے میں عوامی نیشنل پارٹی رہنما سمیت 9 افراد شہید ہوئے تھے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں