افغانستان، نیٹو قافلے پر خود کش دھماکا، 3 غیر ملکی فوجی ہلاک
The news is by your side.

Advertisement

افغانستان، نیٹو قافلے پر خود کش دھماکا، 3 غیر ملکی فوجی ہلاک

کابل: افغانستان کے صوبے پروان میں غیر ملکی فورسز (نیٹو) کے قافلے پر خودکش کار بم دھماکا ہو اجس کے نیتجے میں 3 فوجی ہلاک اور چار زخمی ہوگئے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق نیٹو فورسز کا قافلہ افغان صوبے پروان سے گزر رہا تھا کہ اسی دوران اچانک تیز رفتار گاڑی وہاں پہنچی اور پھر زور دار دھماکا ہوا جس کے نتیجے میں تین فوجی موقع پر ہی ہلاک ہوگئے جبکہ 2 افغانی اور 2 امریکی فوجی زخمی ہوئے جنہیں اسپتال منتقل کردیا گیا۔

افغان میڈیا کے مطابق حکومت اور نیٹو ترجمان نے دھماکے کو خود کش قرار دیتے ہوئے تصدیق کی کہ کارروائی میں غیر ملکی فوجیوں کو نشانہ بنایا گیا جبکہ ایک افغان اہلکار بھی ہلاک ہوا، دھماکے کی ذمہ داری طالبان نے قبول کرلی۔

مزید پڑھیں: افغانستان کے شہر جلال آباد میں خودکش دھماکا، 19 افراد ہلاک، 20 زخمی

گورنر پروان نے غیر ملکی میڈیا کو آگاہ کیا کہ تیز رفتار کار صبح 6 بجے کے وقت نیٹو قافلے کے درمیان آکر زور دار دھماکے سے تباہ ہوئی، مذکورہ کارروائی میں دہشت گردوں نے خود کش حملہ آور کو استعمال کیا جس کے اعضاء کو قبضے میں لے لیا جبکہ سیکیورٹی فورسز نے علاقے کا محاصرہ کر کے تلاشی کا عمل شروع کردیا۔

واضح رہے کہ  افغانستان کے شہر گردیز میں دو روز قبل نماز جمعہ کی ادائیگی کے وقت 2 دہشت گردوں نے مسجد کے اندر خود کو دھماکوں سے اڑایا تھا جس کے نتیجے میں 30 افراد جاں بحق جبکہ 40 سے زائد زخمی ہوئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں: افغانستان: نماز جمعہ کے دوران خودکش حملہ، 30 افراد جاں بحق

خیال رہے کہ گزشتہ ماہ افغانستان کے دارالحکومت کابل میں نائب صدر رشید دوستم کے قافلے پر خودکش حملہ ہوا تھا جس کے نتیجے میں 10 افراد ہلاک اور 40 زخمی ہوگئے تھے، خوش قسمتی سے نائب صدر  حملے میں محفوظ رہے تھے۔

کابل پولیس کے ترجمان کے مطابق دھماکا حامد کرزئی انٹرنیشنل ایئرپورٹ کے داخلی دروازے پر پیش آیا تھا جہاں بڑی تعداد میں لوگ رشید دوستم کے استقبال کے لیے موجود تھے، ہلاک ہونے والوں میں زیادہ تعداد سیکیورٹی اہلکاروں کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں