The news is by your side.

Advertisement

بحیرہ روم میں کشتی الٹنے سے 45 افراد ہلاک

طرابلس : بحیرہ روم میں کشتی الٹنے سے درجنوں تارکین وطن ڈوب کر ہلاک ہوگئے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق مسافر بردار کشتی الٹنے کا واقعہ افریقی ملک لیبیا کے قریب بحیرہ روم میں پیش آیا، جہاں کشتی کا انجن پھٹنے کے باعث کشتی سمندر برد ہوگئی۔

کشتی میں 80 سے زائد افراد سوار تھے جو غیر قانونی طور پر یورپ جانے کی کوشش کررہے تھے جن میں 45 افراد لقمہ اجل بن گئے۔

میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ مقامی مچھیروں نے 37 افراد کو بچالیا جنہیں حراست میں لے لیا گیا ہے، ڈوبنے والوں میں 5 بچے بھی شامل ہیں۔

تارکین وطن کا تعلق افریقی ممالک سینیگال، مالی، چاڈ اور گھانا سے تھا جو روشن مستقبل کی امید لیے نقل مکانی کررہے تھے، اقوام متحدہ نے اسے سال کا بدترین واقعہ قرار دیا ہے۔

غیر ملکی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق رواں برس لیبیا اور تیونس سے سمندر کے ذریعے 17 ہزار غیر قانونی تارکین وطن اٹلی اور مالٹا پہنچے میں کامیاب ہوئے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں