The news is by your side.

Advertisement

جامعہ کراچی خودکش دھماکے میں ہلاک چاروں افراد کی لاشیں نا قابل شناخت

کراچی : جامعہ کراچی خودکش دھماکے میں ہلاک چاروں افراد کی لاشیں نا قابل شناخت ہیں، چینی باشندوں کے اہل خانہ کے ڈی این اے سیمپل موجود نہیں۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ڈی این اےفرانزک لیبارٹری کو جامعہ کراچی خودکش دھماکے میں جاں بحق ہونے والے 4افراد کے ڈی این اے نمونے موصول ہوگئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ خودکش دھماکے میں ہلاک چاروں افراد کی لاشیں نا قابل شناخت ہیں ، شناخت میں تاخیر سےاہلخانہ کے ڈی این اے سیمپل کا دستیاب نہ ہونا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ پاکستانی ڈرائیور کے اہل خانہ کے ڈی این اے حاصل کئےجارہے ہیں جبکہ چینی باشندوں کے اہل خانہ کے ڈی این اے سیمپل موجود نہیں۔

چینی افراد کے زیر استعمال اشیا سے ڈی این اے نمونے لینےکی کوشش جاری ہے ، چینی افراد کے زیر استعمال ٹوتھ برش ریزرو دیگر اشیاسےنمونے ملنے کی امید ہیں۔

گذشتہ روز جامعہ کراچی کے اندر ایک خاتون نے خود کش دھماکے کے ذریعے چینی باشندوں کی وین کو نشانہ بنایا تھا ، جس کے نتیجے میں تین چینی اساتذہ سمیت چارافراد جان بحق اور 3 زخمی ہوگئے تھے۔

ترجمان جامعہ کراچی کے مطابق دھماکے میں کنفیوشس انسٹیٹیوٹ کے ڈائریکٹر ہوانگ گیوپنگ سمیت خواتین اساتذہ ڈنگ میوپنگ اور چن سا ہلاک ہوئی جب کہ ایک پاکستانی ڈرائیور خالد بھی مرنے والوں میں شامل ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں