کراچی: غیرت کے نام پر قتل ہونے والی لڑکی کی قبر کشائی
The news is by your side.

Advertisement

کراچی: غیرت کے نام پر قتل ہونے والی لڑکی کی قبر کشائی

لڑکی کو غیرت کے نام پر قتل کرنے کا حکم جرگے نے دیا

کراچی:  شہر قائد کے علاقے بھٹائی آباد میں غیر ت کے نام پر قتل ہونے والی لڑکی کی گرفتار ملزمان کی نشاندہی پر قبر کشائی کی گئی جس کے دوران طبی ٹیم نے لاش کے نمونے حاصل کیے۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے سچل تھانے کی حدود میں واقع علاقے بھٹائی آباد میں 28 اگست کو صفدانہ نامی خاتون کو سسر  نے پڑوسی کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے دیکھا تو معاملہ جرگے میں گیا جہاں عمائدین نے اُسے غیرت کے نام پر قتل کرنے کا حکم دیا۔

پولیس نے شک کی بنیاد پر ایک شخص کو گرفتار کیا جس نے دوران حراست قتل کا اعتراف کیا اور بتایا کہ اہل خانہ نے مقتولہ کو غیرت کے نام پر قتل کیا۔

پولیس حکام کے مطابق صفدانہ سپرہائی وے کی رہائشی تھی، قتل میں ملوث چار افراد کو گرفتار کرلیا گیا جن کی نشاندہی پر مری گوٹھ میں واقع قبرستان میں موجود مقتولہ کی قبر کشائی کی گئی اور اُس کے نمولنے حاصل کیے گئے۔

طبی ٹیم کے مطابق مقتولہ کو 7 گولیاں انتہائی قریب سے ماری گئیں جبکہ اُس کی گردن، پاؤں اور سینے پر گولیوں سمیت تشدد کے نشانات موجود تھے۔

ایڈیشنل پولیس سرجن ڈاکٹر قرار عباسی نے بتایا کہ لڑکی کو قتل کرنے کے بعد اُسے تابوت میں بند کر کے دفنایا گیا، لڑکی کی موت گولیاں لگنے سے ہی واقع ہوئی۔

پولیس حکام کے مطابق لڑکی کے سسر نے اس بات کا اعتراف کیا کہ اُس نے صفدانہ کو پڑوسی کے ساتھ بات چیت کرنے پر قتل کیا، مقتولہ کو غیرت کے نام پر قتل کرنے کا حکم جرگے نے دیا جس پر دونوں خاندان رضامند ہوئے اور پھر یہ کارروائی کی گئی۔

دو روز قبل گرفتار ملزم کی نشاندہی پر پولیس نے سسر سمیت چار افراد کو گرفتار کیا جبکہ ایک گھر میں چھاپہ مار کر مقتولہ کی رشتے دار خاتون اور اُس کے شوہر اور بیٹے کو بھی گرفتار کیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں