سوئٹزرلینڈ میں جھینگوں کو زندہ پکانے پر پابندی عائد -
The news is by your side.

Advertisement

سوئٹزرلینڈ میں جھینگوں کو زندہ پکانے پر پابندی عائد

سوئٹزرلینڈ میں زندہ جھینگوں کو ابلتے ہوئے پانی میں ڈال کر پکانے پر پابندی عائد کردی گئی ہے جو دنیا بھر کے لوگوں کا پسندیدہ پکوان ہے۔

زندہ جھینگوں کو ہلاک کیے بغیر پکا کر کھانا دنیا بھر کے سی فوڈز ریستورانوں میں عام ہے اور خیال کیا جاتا ہے کہ جھینگے کو کوئی تکلیف نہیں پہنچتی۔

تاہم حال ہی میں کی جانے والی ایک تحقیق میں بتایا گیا کہ جھینگوں کا اعصابی نظام نہایت حساس ہوتا ہےجس کی وجہ سے وہ تکلیف محسوس کر سکتے ہیں۔

حکومت کی جانب سے جاری کردہ نوٹس میں کہا گیا ہے کہ جھینگوں کو پکانے سے قبل انہیں ہلاک کرنا ضروری ہے۔

حکومت نے سمندری غذاؤں جیسے جھینگوں اور کیکڑوں کو برف میں ایک سے دوسری جگہ منتقل کرنے پر بھی پابندی لگاتے ہوئے انہیں ان کے قدرتی ماحول میں رکھ کر منتقل کرنے کی ہدایت کی ہے۔

یاد رہے کہ آکٹوپس بھی ایک ایسا ہی جانور ہے جو محسوس کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے لہٰذا برطانیہ اور یورپی یونین کے ممالک میں آکٹوپس کو بے ہوش کیے بغیر تحقیقی مقاصد کے لیے ان کے جسم کے ساتھ چیر پھاڑ کرنا قانوناً جرم ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں