The news is by your side.

Advertisement

اضافی نمبر نہ ملنے پر حافظ قرآن طالبہ عدالت پہنچ گئی

کراچی  : کوئٹہ کی بولان یونیورسٹی میں داخلہ نہ ملنے پر طالبہ نے سپریم کورٹ سے رجوع کرلیا، عدالت نے وفاق اور پی ایم سی ودیگر کو نوٹس جاری کردیئے۔

بولان یونیورسٹی کوئٹہ میں طالبہ کی جانب سے میڈیکل میں داخلہ نہ ملنے کے حوالے سے درخواست کی سماعت ہوئی۔ درخواست گزار مسماۃ شہلا کا کہنا تھا کہ حافظہ قرآن کوٹہ کے 20نمبرز اضافی مل جاتے تو میرٹ پر داخلہ ہوجاتا۔

سپریم کورٹ نے حفظ قرآن کی بنیاد پر تعلیمی اداروں میں داخلوں پر اہم سوال اٹھا دیا، عدالت کا کہنا تھا کہ حفظ قرآن کی بنیاد پر میڈیکل و دیگر جامعات داخلہ میں اضافی نمبرز کیوں دیئے جائیں؟ عدالت نے وفاق، پاکستان میڈیکل کمیشن ودیگر کو نوٹس جاری کردیئے۔

جسٹس قاضی فائزعیسیٰ نے کہا کہ یہ اہم معاملہ ہے فریقین کو سن کر ہی فیصلہ دیں گے، حافظ قرآن کو 20نمبرز زیادہ کیوں دیں؟ امام مسجد لگانا ہو یا لیکچرر رکھنا ہو یہ قابلیت دیکھی جاسکتی ہے۔

درخواست گزار مسماۃ شہلا کا مؤقف تھا کہ میرٹ کیلئے حافظ قرآن کوٹہ کے20اضافی نمبرزنہیں دیئے گئے، جس پر جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے کہا کہ یہ بتائیں کیا حافظ قرآن طالب علم بہتر ڈاکٹر بن جائے گا؟

عدالت کا کہنا تھا کہ حافظ قرآن ہونا مقدس ہے مگر اس بنیاد پر میڈیکل میں داخلہ کیوں دیا جائے؟ وکیل درخواست گزار نے کہا کہ یہ بہت حساس معاملہ ہوجائے گا۔

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے کہا کہ آپ گھبراتے کیوں ہیں؟ مذہب تو آسانی پیدا کرتا ہے، بعد ازاں سپریم کورٹ رجسٹری نے مسمات شہلا کی درخواست مسترد کردی۔ عدالت نے قرار دیا کہ حفظ قرآن کو داخلے کیلئے اضافی نمبروں سے متعلق سماعت الگ ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں