ہندو گروپ کی بالی ووڈ اداکارہ ارشد وارثی کو زندہ جلانے کی دھمکی -
The news is by your side.

Advertisement

ہندو گروپ کی بالی ووڈ اداکارہ ارشد وارثی کو زندہ جلانے کی دھمکی

ممبئی: بالی ووڈ اداکار ارشد وارثی اپنی آنیوالی فلم ’’لیجنڈز آف مائیکل مشرا‘‘ میں ایک ڈائیلاگ کی وجہ سے مشکل میں پھنس گئے ہیں، ہندو گروپ کی جانب سے بالی ووڈ اداکارہ ارشد وارثی کو زندہ جلائے جانے کی دھمکیاں دی جارہی ہے۔

arshad-post-1

بھارتی میڈیا کے مطابق ارشد وارثی نے اپنی آنیوالی فلم میں ایک ڈائیلاگ بولا کہ ’’ڈاکو والمیک سے سنت والمیک بن جائیں گے‘‘ جس پر انھیں ٹیلی فون کالز ، میسیجز اور خطوط کے ذریعہ زندہ جلانے اور جسم کے ٹکڑے کرنے کی دھکمیاں دی جارہی ہیں ۔

ہندو گروپ کا کہنا ہے کہ اس ڈائیلاگ سے ان کے مذہبی جذبات مجروح ہوئے ہیں اور انھوں نے ارشد وارثی اور لیجنڈ آف مائیکل مشراکے رائٹر و ہدایتکار منیش جاء کے علاوہ فلمسلازوں کشور اروڑا اور شیرین مانتری کیدا کیخلاف ایف آئی آر درج کروادی ہے ۔

ارشد وارثی کا کہنا ہے کہ ہر کوئی والمیت کی کہانی جانتا ہے اگر مجھے پتہ ہوتا کہ اس ڈائیلاگ سے کسی کے جذبات مجروح ہونگے تو میں کبھی بھی اسے ادا نہ کرتا، میں تو خود ہمیشہ مذہبی یا دوسرے تنازعات سے دور رہنے کی کوشش کرتا ہوں۔

arshad-post-2

انھوں نے بتایا کہ اس سے پہلے بھی انکو دھمکیاں مل چکی ہے، جب وہ فلم کابل ایکسپرس کی شوٹنگ کر رہے تھے، طالبان نے انھیں جان سے مارنے کی دھمکی دی تھی۔

kabul

ارشد وارثی کا مزید کہنا تھا کہ آج کل کچھ بھی کہتے ہوئے ہر کوئی خیال کرتا ہے کیوںکہ بھارت مذہبی جذبات سے بھرا پڑا ہے اور کوئی بھی گروپوں اعتراض کر سکتا ہے، لیکن سنسر بورڈ نے اس فلم کو منظوری دے دی اور سنسر بورڈ فلم کے دو مناظر میں تبدیلی چاہتا تھا، ہم فلم کے ریلیز ہونے سے قبل مذکورہ کمیونٹی کو معذرت خواہ کا پیغام ارسال کرینگے۔

انھوں نے مزید کہا کہ میں اس بات پر یقین رکھتا ہوں کہ فلم کی کامیابی کیلئے تنازعات کا استعمال نہیں کرنا چاہیے، فلم کی کہانی ہی اسکی کامیابی کی ضمانت ہوتی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں