خیبرایجنسی میں فضائی کارروائی، شدت پسندوں کے 9 ٹھکانے تباہ -
The news is by your side.

Advertisement

خیبرایجنسی میں فضائی کارروائی، شدت پسندوں کے 9 ٹھکانے تباہ

باجوڑ: خیبرایجنسی میں پاک افغان سرحد کے قریب آرمی کے طیاروں کی بمباری سے شدت پسندوں کی گزرگاہیں اور 9 ٹھکانے تباہ ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق خیبرایجنسی میں افغان بارڈر پر سیکیورٹی فورسز کی جانب سے بری اور فضائی آپریشن کیا گیا جس کے نتیجے میں جیٹ طیاروں کی بمباری سے شدت پسندوں کے 9 ٹھکانے تباہ ہوگئے، آئی ایس پی آر سے جاری کردہ اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ ’’راجگال ویلی کے مقام پر سیکیورٹی فورسز کی فضائی کارروائی کے نتیجے میں شدت پسندوں کی 9 کمین گاہیں اور خفیہ گزگاہوں کو مکمل تباہ کردیا گیا ہے‘‘۔

آئی ایس پی آر کی جانب سے اعلامیے میں مزید کہا گیا ہے کہ ’’سرحد پار دہشت گردوں کی نقل و حرکت روکنے کے لیے پاک فوج کے اضافی دستے بلند پہاڑوں اور چوٹیوں پر تعینات کردیے گئے ہیں‘‘، تاہم غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق فضائی کارروائی میں 15 دہشت گرد بھی ہلاک ہوئے ہیں۔

پڑھیں :   کورکمانڈرز اپنے صوبوں میں بھرپور کومبنگ آپریشن کریں، راحیل شریف

دوسری جانب حفیہ اداروں نے پشاور باچاخان روڈ پر کارروائی کرتے ہوئے دہشت گردی کا منصوبہ ناکام بناتے ہوئے مبینہ خودکش حملہ آور کو گرفتار کر کے نامعلوم مقام پر منتقل کردیاہے، گرفتار ملزم کا تعلق دہشت گرد تنظیم جماعت الاحرار سے بتایا گیا ہے۔

مزید پڑھیں: راولپنڈی سمیت ملک بھر میں کومبنگ آپریشن، سینکڑوں گرفتار

علاوہ ازیں ہنگو میں مقامی پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے دہشت گردوں کے ٹھکانوں سے اسلحہ برآمد کرلیا ہے جبکہ ایبٹ آبار میں کارروائی کرتےہوئے کالعدم تحریک طالبان کا کمانڈر قاری الطاف کو گرفتار کرلیا ہے، حساس اداروں نے تصدیق کی ہے کہ ملزم کا تعلق سوات سے ہے جو کئی دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث رہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں