The news is by your side.

Advertisement

بورس جانسن نے سائنسدانوں کی وارننگ کو نظر انداز کیا، برطانوی میڈیا

لندن : برطانوی میڈیا نے ملک کی تشویشناک صورتحال پر تحقیقاتی رپورٹ جاری کردی، جس میں بتایا گیا ہے کہ بورس جانسن نے سائنسدانوں کی وارننگ کو نظر انداز کیا۔

تفصیلات کے مطابق برطانیہ بھی کرونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثرہ ممالک کی فہرست میں شامل ہے جہاں متاثرہ افراد کی تعداد 1 لاکھ 20 ہزار سے زائد ہوچکی ہے، ملک کی تشویشناک صورتحال پر برطانوی میڈیا نے تحقیقات رپورٹ جاری کردی۔

برطانوی میڈیا نے تحقیقاتی رپورٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ برطانوی وزیر اعظم ابتداء میں کوبرا میٹنگز میں شریک ہی نہیں ہوئے، بورسن جانسن 5 اہم میٹنگز میں غیر حاضر رہے۔

بورس جانسن نے مارچ سے میٹنگز میں شرکت کرنا شروع کی اگر فروری میں ہی سنجیدگی دکھائی جاتی تو ہزاروں جانیں چائی جاسکتی تھی، حکومت ابتدائی دنوں میں کرونا وائرس کی جان لیوا وبا کے خطرے کا تدارک کرنے میں ناکام رہی۔

میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ سائنسدانوں کی وارننگ کو کیوں نظر انداز کیا گیا، ابتدائی 5 ہفتوں میں غیر سنجیدگی کی انکوائری ضرور ہوگی اور لاک ڈاؤن لگانے میں بھی تاخیر کی انکوائری ضرور ہوگی۔

میڈیا نے تحقیقات رپورٹ میں سوال اٹھایا ہے کہ نیشنل ہیلتھ سروس کو بروقت تیار کیوں نہ کیا گیا، 24 جنوری کو برطانوی وزیر صحت نے دعویٰ کیا تھا کہ برطانیہ کو کم خطرہ ہے جبکہ برطانیہ وبا کا مقابلہ کرنے کےلیے تیار ہی نہیں تھا۔3

خیال رہے کہ برطانیہ میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 596 افراد جان کی بازی ہار گئے جس کے بعد اموات کی مجموعی تعداد 16 ہزار 60 تک پہنچ گئی ہے اور مریضوں کی تعداد 1 لاکھ 20 ہزار سے تجاوز کرگئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں