The news is by your side.

Advertisement

ابوظبی: ملازم کو قتل کرنے والے کمپنی منیجر کو دس سال قید کی سزا

ابوظبی: متحدہ عرب امارات کی ریاست ابوظبی میں ملازم کو قتل کرنے والے پرائیویٹ کمپنی کے منیجر کو دس سال قید کی سزا سنادی گئی۔

عرب میڈیا کے مطابق ابوظبی کی عدالت نے ملازم کے قتل میں ملوث پرائیویٹ کمپنی کے منیجر کو جرم ثابت ہونے پر دس سال قید اور 2 لاکھ درہم خون بہا کی رقم ادا کرنے کی سزا سنادی۔

رپورٹ کے مطابق منیجر نے ملازم کو آفس کا کوئی کام دیا تھا جسے مقتول نے کرنے سے انکار کردیا جس کے بعد کمپنی منیجر نے اسے سمندر میں پھینک کر قتل کردیا۔

عدالتی ریکارڈ کے مطابق دونوں آپس میں دوست اور اپنے ملک میں ایک ہی گاؤں سے تعلق رکھتے تھے۔

مقتول اور مجرم ابوظبی میں ایک پرائیویٹ کمپنی میں نوکری کررہے تھے، مجرم اس کمپنی میں منیجر کے طور پر تعینات ہوا اور مقتول اسی کی ٹیم کا حصہ تھا۔

مزید پڑھیں: دبئی: اپنے ہی بچوں‌کو قتل کرنے کی کوشش، سنگ دل ماں کو پانچ سال قید کی سزا

رپورٹ کے مطابق کمپنی منیجر اپنے تین آفس کے دوستوں کے ہمراہ فشنگ کے لیے گھومنے گئے تھے جہاں کمپنی منیجر نے ملازم کو سمندر میں پھینک دیا۔

ایک ملازم کے مطابق مقتول کو تیراکی نہیں آتی ہے جس کے سبب وہ جاں بحق ہوا، عدالت کی جانب سے ایک اور ملازم پر بھی جرمانہ عائد کیا گیا ہے جس نے واقعے سے متعلق پولیس کو آگاہ نہیں کیا تھا۔

پبلک پراسیکیوٹر کی جانب سے مجرم کے لیے سزائے موت تجویز کی گئی تھی۔

بعدازاں ابوظبی کی عدالت نے مجرم کو دس سال قید کی سزا اور مقتول کے ورثا کو 2 لاکھ درہم خون بہا کی رقم ادا کرنے کا حکم دیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں