The news is by your side.

Advertisement

بھارت: نہتی لڑکی کے اللہ اکبر کے نعروں نے انتہا پسند ہندوؤں کے دل دہلا دیے (ویڈیو)

کرناٹک: بھارتی ریاست کرناٹک کے شہر بنگلورو میں ایک نہتی کالج طالبہ کے اللہ اکبر کے نعروں نے انتہا پسند ہندوؤں کے دل دہلا دیے۔

سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوئی ہے، جسے بھارت کے متعدد شہریوں کے آفیشل اکاؤنٹس سے شیئر کیا جا رہا ہے، جس میں ایک کالج طالبہ انتہا پسند ہندوؤں کے جتھے کے سامنے بھرپور ایمانی قوت کا مظاہرہ کرتے نظر آتی ہیں۔

یہ ویڈیو بنگلورو کے ایک کالج کے باہر کی ہے، جہاں برقعے میں ملبوس مسلم طالبہ اسکوٹر پر آتی ہیں، تو کالج کے باہر موجود ہندوتوا گروپ کے انتہا پسند نعرے بازی کر کے طالبہ کو ہراساں کرنے لگتے ہیں۔

انتہا پسند ہندوؤں نے نہتی مسلمان طالبہ کے سامنے جمع ہو کر جے شری رام کے نعرے لگانے شروع کیے تو مسلم طالبہ نے ان سے ڈرنے کی بجائے ان کے دہشت گردانہ اقدام کا بہادری سے سامنا کیا، اور مشتعل ہجوم کے آگے نعرۂ تکبیر بلند کیا۔

بھارت میں مسلم طالبات کے حجاب پہننے کا معاملہ شدت اختیار کرگیا

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ نہتی مسلمان لڑکی زعفرانی اسکارف پہنے لڑکوں کے آگے ڈٹ کر اللہ اکبر کے نعرے لگا رہی ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ کرناٹک کے ایک سرکاری اسکول میں مسلمان طالبات کو حجاب پہننے سے روکا گیا تھا، جس کے بعد 2 اور تعلیمی اداروں میں بھی پابندی کے احکامات جاری کر دیے گئے تھے۔

حجاب پر پابندی کے خلاف مسلم طلبہ بھرپور احتجاج کر رہے ہیں، مسلمان خواتین کوحجاب پہننےسے روکنے کے معاملے پر بھارتی ہائی کورٹ آج حجاب سے روکنے کے خلاف مسلمان خواتین کی پٹیشن پر فیصلہ سنانے جا رہی ہے۔

محبوبہ مفتی نے ویڈیو پر ٹوئٹ کرتے ہوئے لکھا کہ ایک مسلمان لڑکی کو دن دہاڑے بغیر کسی نتیجے کے خوف کے ہراساں کرنا یہ ظاہر کرتا ہے کہ ایسے غنڈوں کو اقتدار والوں کی سرپرستی حاصل ہے۔ انھوں نے لکھا ایسے واقعات کو مجموعی صورت حال سے ہٹ کر نہیں دیکھا جانا چاہیے، کیوں کہ بی جے پی کو امید ہے کہ اس سے یوپی انتخابات میں پولرائزیشن میں مدد ملے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں