The news is by your side.

Advertisement

کراچی، لیاری سمیت ملک کے مختلف علاقوں میں سیاسی جماعتوں کے کارکنوں میں کشیدگی، سینیٹر یوسف بلوچ پر حملہ

چمن، قلعہ عبد اللہ میں پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے کارکنوں نے انتخابی عملے کو آخر کار پانچ گھنٹے کے بعد چھوڑ دیا

کراچی: لیاری کے علاقے چیل چوک پر دو سیاسی جماعتوں کے کارکنوں میں کشیدگی برقرار ہے، مشتعل افراد نے پیپلز پارٹی کے سینیٹر یوسف بلوچ پر حملہ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے چیل چوک کے قریب اس وقت کشیدگی دیکھنے میں آئی جب نادیہ گبول اور سعدیہ جاوید کی آمد پر ان کے حامیوں نے نعرے بازی شروع کی۔

پی پی کے سینیٹر یوسف بلوچ پر حملے کے دوران مشتعل افراد نے آس پاس کی دکانوں پر پتھراؤ بھی شروع کر دیا جس کے باعث علاقے میں کشیدگی پھیل گئی۔

پاک فوج کے افسر کے ساتھ بلاول کے چیف پولنگ ایجنٹ سینیٹر یوسف بلوچ نے گفتگو کرتے ہوئے شکایت کی کہ ان پر پاک سرزمین پارٹی کے کارکنوں نے حملہ کیا اور پولنگ ایجنٹوں کو باہر نکالا گیا تاہم فوجی افسر نے کہا کہ وقت ختم ہونے پر آپ پولنگ اسٹیشن میں داخل ہوئے، جس کے باعث حالات خراب ہوئے، ہمارے لیے امن و امان برقرار رکھنا سب سے اہم ہے۔

دریں اثنا لاہور کے علاقے شاہدرہ میں ن لیگ اور پی ٹی آئی کے امیدواروں میں جھگڑا ہوا، ساہیوال میں بھی سیاسی جماعتوں کے کارکنوں میں ہاتھا پائی ہوئی جس کے نتیجے میں دو افراد زخمی ہوگئے، ٹوبہ ٹیک سنگھ میں بھی کھلاڑی اور متوالے لڑ پڑے، جس میں چار کارکن زخمی ہوئے۔

پاک پتن میں فرید پور ڈوگراں پولنگ اسٹیشن پر بھی دو گروہوں میں انوکھا تصادم ہوا، لوگ ایک دوسرے کو دانتوں سے کاٹتے رہے جس میں تین لوگ زخمی ہوئے۔ سکھر میں نواں گوٹھ مال گودام پولنگ اسٹیشن کے باہر سیاسی کارکنوں میں جھگڑا ہوا، پاک فوج نے معاملہ ٹھنڈا کیا۔

دوسری طرف بلوچستان کے علاقے چمن میں قلعہ عبد اللہ کلی ارمبی جیلانی پولنگ اسٹیشن پر حملے کے واقعے میں پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے کارکنوں نے انتخابی عملے کو آخر کار پانچ گھنٹے کے بعد چھوڑ دیا۔

الیکشن 2018: غیرحتمی غیرسرکاری نتائج کا سلسلہ جاری


پی میپ کے کارکنوں نے انتخابی عملے کو سامان سمیت پکڑ لیا تھا، متاثرہ عملے کا کہنا ہے کہ انھیں بہت مارا پیٹا گیا، تشدد کے نشانات بھی پڑ چکے ہیں۔

عملے کا کہنا ہے کہ پختونخوا ملی عوامی پارٹی کے امیدوار کے بیلٹ پیپرز پر مہریں بھی لگائی گئیں ہیں، جس پر ڈپٹی کمشنر نے الیکشن کمیشن کو پی میپ کے امیدوار کو نا اہل کرنے کی سفارش کر دی ہے۔

واضح رہے کہ ملک بھر میں شام چھ بجے کے بعد پولنگ کا عمل رک چکا ہے اور اس وقت ووٹو ں کی گنتی کا عمل جاری ہے، تاہم مختلف علاقوں میں سیاسی کارکنوں کے مابین جھڑپیں بھی ہو رہی ہیں۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں