The news is by your side.

Advertisement

اسلام آباد: 5 سال میں بچوں سے زیادتی اور دیگر جرائم کے 300 کیسز درج

اسلام آباد: سینیٹ کی خصوصی کمیٹی کو بریفنگ میں بتایا گیا کہ اسلام آباد میں 5 سال میں بچوں سے زیادتی اور دیگر جرائم کے 300 کیس درج ہوئے، 260 سے زائد کیسز کو رجسٹر نہیں کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق بچوں سے زیادتی کے واقعات کی روک تھام پر سینیٹ کی خصوصی کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ ڈی آئی جی آپریشنز اسلام آباد نے کمیٹی کو بریفنگ دی۔

بریفنگ میں بتایا گیا کہ اسلام آباد میں 5 سال میں بچوں سے زیادتی اور دیگر جرائم کے 300 کیس درج ہوئے، 260 سے زائد کیسز کو رجسٹر نہیں کیا گیا۔

ڈی آئی جی نے بتایا کہ ہمارے پاس بچوں کو رکھنے کے لیے لاک اپ ہی نہیں، لاک اپ نہ ہونے سے بچے مزید زیادتی کا شکار ہو سکتے ہیں۔ اسلام آباد سے سنہ 2016 میں 2 بچیاں لاپتہ ہوئیں جن کا تاحال نہیں پتہ چل سکا۔

انہوں نے بتایا کہ 1400 سے زیادہ بچوں کو ریکور کیا جو بھیک مانگتے تھے، وہی بچے چائلڈ پروٹیکشن بیورو سے نکل کر دوبارہ بھیک مانگنے لگ جاتے ہیں، پولیس کے پاس بچوں کو رکھنے کے لیے بیرکس نہیں ہیں۔

بریفنگ میں مزید بتایا گیا کہ اداروں کے درمیان بچوں سے متعلق معلومات کی شیئرنگ کا میکنزم نہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں