برطانیہ: کرایہ مانگنے پر مسلمان ٹیکسی ڈرائیور پر خاتون و مرد کا تشدد ARYNews.tv
The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ: کرایہ مانگنا جرم،مسلمان ٹیکسی ڈرائیور پر تشدد

لندن : مغربی ممالک میں مسلمانوں کے ساتھ ناروا سلوک کا سلسلہ تاحال جاری ہے،برطانیہ کے علاقے ڈربی شائر میں ایک مرد اور ایک خاتون نے کرایہ طلب کرنے پر مسلمان ٹیکسی ڈرائیور کو تشدد کا نشانہ بنایا، پاس کھڑے لوگ ویڈیو بناتے رہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یہ واقعہ برطانیہ کے علاقے ڈربی شائر میں پیش آیا جہاں 50 سالہ ڈرائیور شاہد اقبال ڈرائیور پر تشدد کیا گیا لیکن کسی نے اسے بچانے کی کوشش نہیں کی۔

مسلمان ٹیکسی ڈرائیور شاہد اقبال نے بتایا کہ خاتون نے نہ صرف ٹیکسی کا کرایہ دینے سے انکار کیا بلکہ زبردستی گاڑی کا اسٹیئرنگ پکڑتے ہوئے اس سے 80 پاؤنڈ کا مطالبہ کیا، انہوں نے صورتحال سے نمٹنے کے لیے پولیس کو بلانے کے لیے موبائل فون جیب سے نکالنے کی کوشش کی تو خاتون نے اس کے ہاتھ پر کاٹ لیا اور تھپڑ بھی مارے۔

شاہد اقبال کے مطابق جواب میں وہ فوراً گاڑی سے نکلے تاہم خاتون اور اس کے ساتھی نے مل کر اسے دھکے دیے جب کہ پاس کھڑے افراد نے ان کی کوئی مدد نہ کری بل کہ ویڈیو بنانے میں مصروف رہے اور واقعے سے لطف اندوز ہوئے اور یہ ویڈیو انٹرنیٹ پر اپ لوڈ کردی جو کہ انٹرنیٹ پر وائرل ہوگئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں