The news is by your side.

Advertisement

براڈ بینڈ صارفین کی تعداد تین فیصد سے بڑھ کر 38 فیصد ہوگئی، انوشہ رحمان

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے انفارمیشن ٹیکنالوجی انوشہ رحمان نے کہا ہے کہ حکومت ملک کی پہلی ڈیجیٹل پالیسی کااعلان کرنے جا رہی ہے ڈیجیٹل پالیسی میں آئی ٹی کے شعبے کو ریلیف دینے کی کوشش کر رہے ہیں ۔

اسلام آباد میں پاکستان کے پہلے نیشنل انکوبیشن سینٹر کی پہلی سالگرہ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انوشہ رحمان کاکہنا تھاکہ موجودہ حکومت نے جب ذمہ داریاں سنبھالی تو ملک میں براڈبینڈ صارفین کی تعداد تین فیصد تھی جو اب 38 فیصد تک پہنچ چکی ہے ۔

انھوں نے بتایا کہ حکومت نے 26 ارب روپے ملک میں آئی ٹی اور ٹیلی کام کے فروغ کے لیے خرچ کیے، حکومت نے چاروں صوبوں میں انکوبیشن سینٹرز بنانے کا وعدہ پورا کیا، کراچی کے انکوبیشن سینٹر کا افتتاح کل جبکہ بلوچستان کے سینٹر کا افتتاح 30 مئی کو کیا جائے گا۔

اُن کا کہنا تھا کہ حکومت پندرہ مئی کو ڈیجیٹل اسکل پروگرام کا بھی افتتاح کرنے جا رہی ہے جس کے تحت دس لاکھ نوجوانوں کو تربیت فراہم کی جائے گی۔

تقریب سے خطاب میں سی ای او جاز عامر ابراہیم کاکہنا تھا کہ انکوبیشن سینٹر پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کی بہترین مثال ہیں اور یہ وہ پہلی کمپنی ہے جسے پہلے شراکت دار کے طور پر کام کرنے کا موقع ملا۔

انھوں نے بتایاکہ اس وقت ملک میں تین انکوبیشن سینٹر قائم ہیں جبکہ مستقبل میں ان کی تعداد میں اضافہ کیا جائے گا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں