The news is by your side.

Advertisement

براڈشیٹ کمپنی کے سی ای او نے رشوت کی آفر کرنے والے کا نام بتادیا

لندن: شریف فیملی کی جانب سے کس نے رشوت کی پیشکش کی؟ براڈشیٹ کمپنی کے سی ای او کاوے موسوی نے رشوت کی آفر کرنے والے کا نام بتادیا۔

تفصیلات کے مطابق اے آر وائی نیوز کو دئیے گئے انٹرویو میں براڈشیٹ کمپنی کے سی ای او کاوے موسوی نے چشم کشا حقائق بیان کرتے ہوئے بتایا کہ شریف فیملی کی جانب سے انجم ڈار نے رشوت کی پیشکش کی، اس نے خود کو نواز شریف کا بھانجا یا بھتیجا ظاہر کیا اور ثبوت کے طور پر نواز شریف کے ساتھ اپنی تصاویر بھی دکھائیں۔

کاوے موسوی نے بتایا کہ انجم ڈار سے ملاقات کا گواہ بھی ہے، ملاقات میں اس نے 25 ملین ڈالر کی پیشکش کی، بعد
میں نے سوچا یہ معاملہ وکلا کےذریعےطے ہونا چاہیے، سارے معاملے پر ہچکچاہٹ بھی تھی اس وقت نواز شریف اقتدار میں نہیں تھے۔سی ای اوبراڈ شیٹ نے اے آر وائی نیوز کو دئیے گئے انٹرویو میں بتایا کہ سابق صدر مشرف نے فہرست دی تھی جن کی جائیدادوں کا سراغ لگانا تھا، ایک ٹھگ جسے بعد میں وزیرداخلہ بنایا گیا اس کا نام “آفتاب شیرپاؤ” ہے، ہم نے آفتاب شیرپاؤ کےجرسی میں اکاؤنٹس کاپتہ لگایا، ہم نے نیب اور اٹارنی جنرل سےکہا ہمیں ان کے اکاؤنٹس کی تفصیل لینی ہے۔

سی ای اوبراڈ شیٹ نے اپنے انٹرویو میں کہا کہ آصف زرداری نے اپنے ملک پاکستان کا نام بدنام کیا، ہم نے جن جائیدادوں کا سراغ لگایا آصف زرداری نےانہیں بحال کرایا، پیغام یہ تھا کہ جائیدادوں سے متعلق مزید تفتیش نہ کی جائے، ہمیں کہا گیا25ملین ڈالرلےلو معاملہ ختم کردو۔

کاوے موسوی نے بتایا کہ انجم ڈار سے ملاقات کا گواہ بھی ہے، ملاقات میں اس نے 25ملین ڈالر کی پیشکش کی، بعد میں نےسوچا یہ معاملہ وکلاکےذریعےطےہوناچاہیے، ہچکچاہٹ بھی تھی اس وقت نواز شریف اقتدار میں نہیں تھے کیونکہ آصف زرداری کی حکومت تھی ہم نےاس پر سوچ بچار کی۔

یہ بھی پڑھیں:  وزیر اعظم عمران خان کہیں تو ایون فیلڈ کی تحقیقات کریں گے: چیف براڈ شیٹ کمپنی

سی ای او براڈ شیٹ نے اپنے انٹرویو میں بتایا کہ میراجواب تھا کہ عدالت کےتوسط سےسمجھوتہ کرسکتے ہیں، ساتھ ہی انجم ڈارکو کہا کہ پیشکش مجرمانہ فعل ہے میں کرپشن کی تفتیش کررہا ہوں۔

اےآر وائی نیوز خبر سے متعلق شریف خاندان کا موقف جاننے کی کوشش کی ، لیکن حسین نواز نے کسی بھی قسم کا جواب سےانکار کردیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں